افغانستان کیساتھ مزید دونئے بارڈ رکراسنگ پر تجارتی سرگرمیوں کا آغاز جلد کیا جائیگا: تیمور جھگڑا

افغانستان کیساتھ مزید دونئے بارڈ رکراسنگ پر تجارتی سرگرمیوں کا آغاز جلد کیا ...

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر خزانہ کی ڈائریکٹر جنرل نیشنل لاجسٹک سیل میجر جنرل عاصم اقبال کے ساتھ ملاقات،افغانستان کے ساتھ بارڈر کراسنگ پر سہولیات کی فراہمی پرتبادلہ خیال خیبر پختونخوا کے وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے کہاہے کہ وزیر اعظم عمران خان کی خصوصی ہدایات پر طورخم بارڈر کو 24 گھنٹے کھولنے کے مثبت نتائج سامنے آنے کے بعد صوبائی حکومت افغانستان کے ساتھ سرحد پر مزید دوبارڈر کراسنگ انگور اڈہ اور غلام خان پر تجارتی سرگرمیوں کا جلد آغاز کرے گی اور اس سلسلے میں تمام متعلقہ وفاقی محکموں کے ساتھ رابطوں کا آغاز کردیا گیا ہے۔یہ بات انہوں نے نیشنل لاجسٹک سیل کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل عاصم اقبال کے ساتھ این ایل سی ہیڈکوارٹر اسلام آباد میں ملاقات کے موقع پر کہی۔اس موقع پروزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا اور ڈی جی این ایل سی نے طورخم بارڈرپر تجارتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لئے سہولیات کو مزید بہتر اورطریقہ کار کو آسان بنانے کے علاوہ انگور اڈہ اورغلام خان بارڈر کراسنگ کو 24 گھنٹے کھولنے کے سمیت دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔میجر جنرل عاصم اقبال نے وزیر خزانہ کو این ایل سی کی کارکردگی اور سرگرمیوں کے بارے میں آگاہ کیا۔انہوں نے وزیر خزانہ کو بتایا کہ این ایل سی پورے ملک میں تیز اورمحفوظ ٹرانسپورٹیشن اور قدرتی آفات میں انجینئرنگ سروسزفراہم کرنے کے علاوہ میگا اسٹرکچرز،پلوں،شاہراہوں کی تعمیر میں بھی مہارت رکھتا ہے جبکہ ادارے نے افغانستان میں بھی مختلف بڑے منصوبوں پر کام کیا ہے۔وزیر خزانہ نے این ایل سی کی جانب سے ختلف شعبوں میں معیاری خدمات کی فراہمی اور باالخصوص طورخم بارڈر کو 24 گھنٹے کھولنے میں ادارے کے تعاون کو بھرپور سراہا۔انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا حکومت نے افغانستان کے ساتھ سرحد پرانگور اڈہ اور غلام خان پر مزید دونئے بارڈر کراسنگ تجارتی سرگرمیوں کے لئے24 گھنٹے کھولنے پر کام کا آغاز کردیا ہے اور اس ضمن میں دیگر متعلقہ وفاقی اداروں کے ساتھ این ایل سی کا کردا ر بھی انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔بعد ازاں وزیر خزانہ تیمور سلیم جھگڑا کو این ایل سی ہیڈ کوارٹر آمد کے موقع پر میں میجر جنرل عاصم اقبال کی جانب سے یادگاری شیلڈ اور تحفہ بھی پیش کیا گیا

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...