" شادی بیاہ سے جڑے کاروبار کو بھی دستاویزی بنائیں گے" کنوارے پاکستانیوں کیلئے بھی ایف بی آر نے خطرے کی گھنٹی بجادی

" شادی بیاہ سے جڑے کاروبار کو بھی دستاویزی بنائیں گے" کنوارے پاکستانیوں کیلئے ...

  



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے چیئرمین سید شبر زیدی نے واضح کیا ہے کہ ہم نے شناختی کارڈ کی شرط کبھی واپس نہیں لی تھی، 31 جنوری کے بعد یہ شرط دوبارہ نافذ العمل ہوگی۔دنیا نیوز کے پروگرام‘’دنیا کامران خان کیساتھ”

میں گفتگو کرتے ہوئے چیئرمین ایف بی آر نے کہا کہ ریٹیلر کی پہلے سال کی سیلز کیلئے پوائنٹ آف سیل سسٹم لا رہے ہیں۔ یکم جنوری سے اس پر عملدرآمد شروع ہو گیا ہے۔شبر زیدی کا ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہنا تھا کہ رئیل سٹیٹ میں کچھ علاقے ایسے ہیں جہاں ایویلیوایشن ابھی کم ہے۔ ایویلیوایشن کے عمل کو بہتر بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ہر ٹرانزیکشن کو مارکیٹ ویلیو کے 85 فیصد تک لے کر جائیں گے۔ شادی بیاہ سے جڑ ے کاروبار کو بھی دستاویزی بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ بہت سے کاروبار ہیں جو سرکاری پیسوں پر چل رہے ہیں۔

ریسٹورنٹس عوام سے 16 فیصد ٹیکس لیتے ہیں لیکن حکومت کو نہیں دیتے۔ لوگ بل کی ادائیگی سے پہلے اس پر سیلز ٹیکس نمبر ضرور دیکھیں۔ ریسٹورنٹس میں پوائنٹ آف سیلز سسٹم لگا رہے ہیں۔ رسید پر سیلز ٹیکس نمبر نہ ہو تو سیلز ٹیکس ادا نہ کریں۔شبر زیدی نے بتایا کہ ایف اے ٹی ایف نے جیولر انڈسٹریز کو دستاویزی کرنے کیلئے کہا، ہم اس انڈسٹری کو دستاویزی بنانے پر کام کر رہے ہیں۔

مزید : بزنس