”ٹیسٹ میچ چار دن کا ہی ہونا چاہئے اور۔۔۔“ کس ملک نے آئی سی سی کی تجویز کی حمایت کر دی؟

”ٹیسٹ میچ چار دن کا ہی ہونا چاہئے اور۔۔۔“ کس ملک نے آئی سی سی کی تجویز کی ...
”ٹیسٹ میچ چار دن کا ہی ہونا چاہئے اور۔۔۔“ کس ملک نے آئی سی سی کی تجویز کی حمایت کر دی؟

  



لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلش اینڈ ویلز کرکٹ بورڈ (ای سی بی) نے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کی چار روزہ ٹیسٹ کرکٹ کی تجویز کے حق میں ووٹ دیدیا ہے جس کا کہنا ہے کہ اس سے کھلاڑیوں پر کام کے بے تحاشا بوجھ میں کچھ کمی ہو گی۔

تفصیلات کے مطابق ای سی بی نے ٹیسٹ میچ کو 4 دن تک محدود کرنے کی تجویزسامنے آتے ہی اس کے حق میں اپنا ووٹ بھی دیدیا ہے۔ ای سی بی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ہم اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ چار روزہ ٹیسٹ ہی مصروف ترین شیڈول کی ضرورت ہے، اس سے کھلاڑیوں پرسے کام کے بوجھ میں کمی ہوگی، ہم واقعی 4 روزہ ٹیسٹ میچ کے حق میں ہیں مگر اس کے ساتھ ہمیں اس بات کو بھی مدنظر رکھنا ہوگا کہ کھلاڑیوں، شائقین اور کچھ دوسروں کیلئے یہ ایک جذباتی معاملہ ہوسکتا ہے۔

اس سے قبل کرکٹ آسٹریلیا (سی اے) کے چیف ایگزیکٹیو کیون روبرٹس نے بھی کہا تھا کہ چار روزہ ٹیسٹ ایک ایسی چیز ہے جس کے بارے میں ہمیں سنجیدگی سے غور کرنا ہو گا۔ واضح رہے کہ آئی سی سی نے 2017ءمیں 4 روزہ ٹیسٹ کھیلنے کی اجازت دی تھی، اس نوعیت کا پہلا میچ جنوبی افریقہ اور زمبابوے جبکہ دوسرا انگلینڈ اور آئرلینڈ کے درمیان کھیلا گیا۔

فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن کے چیف ٹونی آئرش پہلے ہی خبردار کرچکے ہیں کہ ٹیسٹ میچ کا دورانیہ کم کرنے سے حاصل ہونے والے اضافی دن کسی دوسرے فارمیٹ کو دئیے جاسکتے جس سے کھلاڑیوں کو ریلیف ملنے کا مقصد پورا نہیں ہو گا۔

یاد رہے کہ آئی سی سی کی اس تجویز کا باقاعدہ جائزہ کرکٹ کمیٹی کے اجلاس میں لیا جائے گا اور اگر وہاں سے منظوری مل گئی توپھراس معاملے پر آئی سی سی چیف ایگزیکٹیوز کمیٹی میں ووٹنگ ہوگی، منظوری کی صورت میں آئی سی سی بورڈ اس کی توثیق کرے گا، اگر ایسا ہوا تو پھر 2023ءسے 4 روزہ ٹیسٹ کو لازمی قرار دیا جائے گا۔

مزید : کھیل