ریسکیو 1122 کا چین کی کمپنی کیساتھ ایمبولینس خریدنے کا معاہدہ کالعدم

ریسکیو 1122 کا چین کی کمپنی کیساتھ ایمبولینس خریدنے کا معاہدہ کالعدم

 لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائیکورٹ کی مسٹر جسٹس عائشہ اے ملک نے ریسکیو1122کاچائنہ کی کمپنی سے استعمال شدہ 112 ایمبولینس خریدنے کامعاہدہ کالعدم قراردیتے ہوئے نیا ٹینڈر جاری کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔فاضل جج نے قرار دیا کہ وکلاءکے دلائل اور کاغذات سے یہ ثابت ہورہا ہے کہ اس کمپنی کو رولز کی خلاف وری کرتے ہوئے پسند کی بناءپر نوازا جارہا ہے۔لہٰذا49کروڑ روپے کی بڑی رقم کے اتنے بڑے معاہدے کے لیے نیا ٹینڈر جاری کرکے اوپن بڈنگ کی جائے۔عدالت کے روبرو مقامی شہری محمدشاہدکی جانب سے دائردرخواست میں کہاگیاتھاکہ ریسکیو1122 کے ڈائریکٹر رضوان نصیر نے ٹیکنیکل کمیٹی کی جانب سے مسترد کئے جانے کے باوجودچائنہ کی ایک کمپنی سے ایمبولینس گاڑیاں خریدنے کی منظوری دے دی ہے جس کے باعث غیر معیاری گاڑیوں کی خریداری سے قومی خزانے کو بھاری نقصان ہوسکتاہے۔لہٰذا عدالت اس کا نوٹس لیتے ہوئے کارروائی کرے اور معاہدے کو کالعدم قراردیکر نیا ٹینڈر جاری کرنے کا حکم دیا جائے۔

مزید : صفحہ آخر