بھوجا ایئرلائن کا طیارہ پائلٹ کی غلطی سے تباہ ہوا، تحقیقاتی رپورٹ

بھوجا ایئرلائن کا طیارہ پائلٹ کی غلطی سے تباہ ہوا، تحقیقاتی رپورٹ

اسلام آباد(اے این این ) بھوجا ایئرلائن طیارہ حادثہ کی تحقیقاتی رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ 20اپریل کو بھوجا ایئر لائن کا کراچی سے اسلام آباد آنیوالا مسافر طیارہ خراب موسم اورپائلٹ کی غلطی سے تباہ ہوا ، پائلٹ نے طیارہ ہوائی بگولے کی زد میں آنے کے باوجود لینڈنگ کی کوشش کی ، معاون پائلٹ ”سرپل اپ اور گو راﺅنڈ ،گو راﺅنڈ“ کی آوازیں لگاتا رہا۔ جس کی ایک نہ سنی گئی۔ ذرائع کے مطابق بھوجا ایئر لائن طیارہ حادثہ کی تحقیقات آفیسر مجاہد اسلام نے سول ایوی ایشن کو طیارہ حادثے کی اب تک ہونیوالی تحقیقات سے آگاہ کردیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ طیارے کے وائس ریکارڈ سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ 20اپریل کو حسین آباد کے علاقے میں تباہ ہونیوالے طیارے کا حادثہ موسم کی خرابی اور پائلٹ کی غلطی سے پیش آیا ۔ پائلٹ نے طیارہ ہوائی بگولے کیزد میں آنے کے باوجود لینڈ کی کوشش کی اورمعاون پائلٹ کی ہدایات پر کوئی توجہ نہیں دی۔ پائلٹ فود اللہ آفریدی نے کنٹرول ٹاور کو طیارے میں کسی فنی خرابی کی اطلاع نہیں دی اور نہ ہی ایمرجنسی کال کی تھی۔طیارہ ونڈ شیئرڈاﺅن ڈرافٹ( ہوائی بگولے) کی زد میں آنے کے باعث تباہ ہوا جس پر پائلٹ کنٹرول نہ کر سکا اورخراب موسم کے باوجود لینڈنگ کی ناکام کوشش کی ۔

مزید : صفحہ آخر