بارشوں کے بعد کپاس کی فصل کو جڑی بوٹیوں کے حملے سے بچانے کے لئے بروقت اقدامات ضروری ہیں: محکمہ زراعت پنجاب

بارشوں کے بعد کپاس کی فصل کو جڑی بوٹیوں کے حملے سے بچانے کے لئے بروقت اقدامات ...

  

لاہور (اے پی پی) بارشوں کے بعد کپاس کی فصل پر جڑی بوٹیوں پر گہری نظر رکھنے اور ان کے مناسب تدارک کے لئے بروقت اقدامات انتہائی ضروری ہیں۔ محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان کے مطابق کپاس کی فصل میں جڑی بوٹیاں پیداوار میں 15تا 20 فیصد کمی کا باعث بنتی ہیں ۔ بارش کے بعد متوقع جڑی بوٹیوں پر کنٹرول نہ کرنے کی صورت میں کپاس کی فصل مکمل طور پر تباہ بھی ہو سکتی ہے۔ زرعی ماہرین کے مطابق کپاس میں اٹ سٹ، مدھانہ گھاس، جنگلی چولائی، قلفہ، تاندلہ، ڈیلا اور ہزاردانی جیسی جڑی بوٹیوں کا حملہ ہو سکتا ہے۔ اس کے لئے ضروری ہے کہ بارش کے بعد وتر آنے پر کپاس کے کھیت میں قطاروں کے درمیان ہل چلا کر اور پودوں کے درمیان ہاتھ سے گوڈی کرکے جڑی بوٹیاں تلف کی جائیں۔

اگر فصل بڑی ہے اور اس کے اندر ہل یا گوڈی کرنا ممکن نہیں ہے تو فصل پر سپرے مشین کی لانس کے ساتھ شیلڈ لگا کر گلائیفوسیٹ یا مقامی زرعی ماہرین کے مشورہ سے کسی دوسری جڑی بوٹی مار زہر کا سپرے کریں تاکہ زہر کپاس کے پودوں پر گرنے اور پتوں کے جلنے کانقصان نہ ہو۔ ترجمان کے مطا بق کاشتکار ان تجاویز پر عمل کرکے کپاس کی فصل سے جڑی بوٹیوں سے چھٹکارا پاکر بہترین پیداوار حاصل کر سکتے ہیں۔

(lh/jav/ama 1500:14)

مزید :

کامرس -