پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ کا اکیڈمک سیشن یکم جنوری 2015سے ہوگا

پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ کا اکیڈمک سیشن یکم جنوری 2015سے ہوگا

  

لاہور (جنرل رپورٹر)پرنسپل پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ پروفیسر انجم حبیب وہرہ نے کہا ہے کہ انسٹی ٹیوٹ کا اکیڈمک سیشن یکم اکتوبر 2014کی بجائے یکم جنوری 2015سے ہوگا صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے میڈیکل کی اعلی تعلیم میں پی جی ایم آئی کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ میڈیکل کی اعلی تعلیم کے بارے میں تصورات زیادہ واضح ہوکر سامنے آئے ہیں اور اب پوسٹ گریجویٹ میڈیکل ایجوکیشن کے مختلف شعبوں میں سپیشلائزڈ اور ان سے مختلف فیڈز میں مہارت حاصل کرنے کے رجحان کو زیادہ پذیرائی مل رہی ہے اور خصوصی دلچسپی کا مظاہرہ کرنے والے ڈاکٹرز نئی نئی تکنیک اور پروسیجر اختیار کررہے ہیں جس سے میڈیکل سائنس میں روز افزوں ترقی ہورہی ہے انہوں نے کہاکہ بہت سے ممالک میں میڈیکل کی اعلی تعلیم کےلئے ایک مستقل معیار بنالیا ہے۔ اسی معیار کے تحت یونیورسٹیوں اور سپیشلائزڈ انسٹی ٹیویشن میں تعلیم دی جارہی ہے۔ پروفیسر انجم حبیب نے کہاکہ پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ لاہور دنیا کے بہت سے ترقی یافتہ ممالک کے میڈیکل ایجوکیشن کے اداروں کے ساتھ مستقل رابطے میں ہیں اور ہم یہاں زیر تعلیم و زیر تربیت ڈاکٹروں کو جدید دنیا کے تقاضوں کے مطابق پوسٹ گریجوایشن کی تعلیم سے آراستہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی جی ایم آئی لاہور کا آغاز 1974ءمیں چند کمروں سے ہوا تھالیکن موجودہ حکومت کی کوششوں سے آج یہ انسٹی ٹیوشن جدید ادارے میں تبدیل ہوچکا ہے جہاں طبی تعلیم کے ساتھ ساتھ میڈیکل ریسرچ پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے۔انہوں نے اس وقت بھی انسٹی ٹیوٹ کا بہت سے دیگر ممالک کے ساتھ انٹرنیٹ کے ذریعے رابطہ ہے تاکہ تربیت حاصل کرنے والے ڈاکٹروں کو جدید معلومات کے حصول میں کسی قسم کی دقت کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے کہا کہ اس تربیت کا بنیادی مقصد ڈاکٹروں کو اعلی تعلیم اور بہترین تربیت فراہم کرنا ہے تاکہ عوام کو کوالٹی کیئر مہیا کی جاسکے۔ اس مقصد کے لئے وزیراعلی پنجاب محمد شہباز شریف خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں اور میڈیکل کے شعبہ کی ترقی کےلئے اربوں روپے کے فنڈز مہیا کیا جارہے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -