امریکی جوڑے کے ہاں پیدا ہونے والے جڑواں بچے، سر جدا تھے لیکن باقی دھڑ جڑا ہوا

امریکی جوڑے کے ہاں پیدا ہونے والے جڑواں بچے، سر جدا تھے لیکن باقی دھڑ جڑا ہوا
 امریکی جوڑے کے ہاں پیدا ہونے والے جڑواں بچے، سر جدا تھے لیکن باقی دھڑ جڑا ہوا
کیپشن: pic

  

بوسٹن (نیوز ڈیسک) ایک امریکی جوڑے کے ہاں پیدا ہونے والے جڑواں بچے، جن کے سر تو جدا تھے لیکن باقی دھڑ جڑا ہوا تھا۔ دو ماہ تک موت و حیات کی کشمکش میں گزار کر بالآخر اس جہانِ فانی سے کوچ کرگئے ہیں۔ اینڈریو اور گیرٹ نامی ان بچوں کا دھڑ پیدائشی طور پر اس طرح جڑا ہوا تھا کہ دونوں ایک ہی دل اور جگر کے سہارے زندہ تھے۔ بچوں کے والدین مشیل اور کوڈی کو ڈاکٹروں نے اسقاطِ عمل کا مشورہ دیا تھا کیونکہ ان کا خیال تھا کہ یہ بچے ایک دن سے زائد زندہ نہیں رہ پائیں گے۔ والدین نے اسقاطِ عمل کے مشورہ کو رد کیا اور بالآخر دو ماہ قبل یہ بچے اس دنیا میں آگئے۔ ڈاکٹروں کی توقعات کے برعکس یہ بچے دو ماہ تک زندہ رہے لیکن اس تمام عرصہ میں انہیں غیر معمولی طبی نگہداشت میں رکھا گیا۔ والدین کا کہنا ہے کہ وہ اپنے ننھے بچوں کی زندگی خود ختم نہیں کرنا چاہتے تھے اس لئے انہوں نے اسقاطِ حمل نہیں کیا اور پیدائش کے بعد بچوں کا آپریشن اس لئے نہیں کروایا کہ یہ ایک خطرناک عمل ہے اور اس میں بچوں کی ہلاکت کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے۔

مزید :

علاقائی -