قبرستان اور مسجد کے سوا ہر جگہ پر جائیداد ٹیکس ،خزانہ بھرنے کیلئے محکمہ ایکسائز کو ٹاسک مل گیا

قبرستان اور مسجد کے سوا ہر جگہ پر جائیداد ٹیکس ،خزانہ بھرنے کیلئے محکمہ ...

  

                                 لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت پنجاب نے قبرستانوں اور مسجدوں کے علاوہ ہر پراپرٹی پر ٹیکس عائد کردیا ہے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق ایئرپورٹ، ڈرائی پورٹس، گرڈ سٹیشن، ہوسٹلز، نرسریوں، ٹرانسمیشن ٹاور، پارکنگ پلازہ، پولٹری فارمز، کیٹل شیڈ، بھٹہ خشت پر بھی ٹیکس عائد کردیا گیا ہے۔ حکومت پنجاب نے تیرہ سال بعد پراپرٹی ٹیکس کا نیا سروے کروایا جس پر اب یکم اگست سے عملدرآمد کا نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔ ٹیکس کی شرح تو پندرہ سے بیس فیصد کم کردی گئی ہے مگر اب ٹیکس پہلے سے زیادہ ادا کرنا پڑے گا، 2001ءمیں جس پراپرٹی کا کرایہ 20 ہزار روپے سالانہ تھا اب اس کا کرایہ ڈیڑھ لاکھ روپے سالانہ کیا گیا ہے۔ پہلے کمرشل املاک پر کرایہ کا 25 فیصد اور رہائش پر 20 فیصد ٹیکس تھا اب سب پر ٹیکس کی شرح کم کرکے پانچ فیصد کی گئی۔ نئے نوٹیفکیشن کے مطابق سینما تھیٹرز، آڈیٹوریم، فیکٹری، میرج ہالز، میرج لان، ایونٹ ہالز، مارکی، کولڈ سٹروریجز پر ٹیکس لگایا گیا ہے جبکہ ایسی املاک جو رہائشی ہوں مگر وہاں تعلیمی ادارے یا دفاتر بنائے گئے ہوں ان کو کمرشل ٹیکس میں شامل کیا گیا ہے۔ ہوٹلز، موٹلز، گیسٹ ہا?سز، ہوسٹلز، پٹرول پمپ، سی این جی سٹیشنز، ملٹی پل سٹوریز، پرانی عمارتوں، شہروں کی حدود میں زرعی زمین آرچڈز، نرسریز، پولٹری فارمز، سپورٹس کمپلیکس، ریس کورسز اور سوئمنگ پولز پر بھی پراپرٹی ٹیکس عائد کیا ہے۔

مزید :

علاقائی -