آئی جی سندھ اقبا ل محمود کواصول پرستی پرہٹا دیا گیا ، محکمہ داخلہ سندھ کی تردید

آئی جی سندھ اقبا ل محمود کواصول پرستی پرہٹا دیا گیا ، محکمہ داخلہ سندھ کی ...
آئی جی سندھ اقبا ل محمود کواصول پرستی پرہٹا دیا گیا ، محکمہ داخلہ سندھ کی تردید

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)انسپکٹر جنرل سندھ پولیس اقبال محمود کی خدمات اچانک وفاق کے حوالے کرنے پربہت سے سوالات نے جنم لیا ہے، ذرائع کے مطابق ایماندار افسر اقبال محمود کو اصول پرستی کی سزا دی گئی ہے۔دوسری جانب محکمہ داخلہ سندھ نے اقبال محمود کو تبدیل کرنے کی خبروں کی ہی تردید کردی ہے ۔ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ اقبال محمود کو پولیس کے معاملات میں ایمانداری کرنے پر بر طرف کیا گیا جس میں ایک اہم شخصیت نے کردار ادا کیا ،اقبال محمود پر کافی عرصے سے دباﺅ تھا کہ پولیس کے سازو سامان کی خریداری میں صوبائی حکومت کے من پسند افراد اور کمپنیوں کو ٹھیکے دیئے جائیں تاہم اقبال محمود نے دباﺅ کے باوجود ایسا کرنے سے انکار کر دیا تھا جس پر ان کی خدمات وفاق کے حوالے کر دی گئیں ۔سندھ حکومت نے بجٹ میں صوبائی پولیس کے لئے کراچی آپریشن اور دہشت گردی سے نمٹنے کے لئے 5ارب روپے کی خطیر رقم رکھی تھی جس سے پولیس اہلکاروں کے لئے بکتر بند گاڑیاں اور بلٹ پروف جیکٹ کی خریداری کی جانی تھی ۔ سندھ حکومت نے صوبائی اسمبلی کے ذریعے آئین میں تبدیلی کرکے محکمہ پولیس کے ٹھیکے بھی انسپکٹر جنرل کو دینے کا اختیاردے دیا ، تاکہ من پسند افراد کو ٹھیکے دلواسکتے۔دوسری جانب میڈیا پر آنے والی خبروں سے وزیر اعلیٰ سندھ اور آئی جی پولیس کے درمیان محکمے کے لئے سامان کی خریداری پر اختلافات کی تصدیق کی گئی ہے ، تاہم اس کا الزام آئی جی سندھ اقبال محمودپر ڈال دیا گیا کہ ہے وہ تمام سامان اپنی مرضی سے خریدنا چاہتے تھے جس کے باعث اختلافات پیدا ہوئے ہیں ۔آئی جی سندھ اقبال محمود سے متعلق نشر ہونے والی خبروں نے اس وقت ایک نیا موڑ اختیار کر لیا جب محکمہ داخلہ سندھ کی جانب سے آئی جی اقبال محمود کو تبدیل کرنے کی خبرو ں کی ہی سرے سے تردید کر دی ہے ۔

مزید :

کراچی -اہم خبریں -