حکومت چار حلقو ں کے مطالبات تسلیم کر لے تو لانگ مارچ منسوخ کر سکتے ہیں :عمران خان

حکومت چار حلقو ں کے مطالبات تسلیم کر لے تو لانگ مارچ منسوخ کر سکتے ہیں :عمران ...
حکومت چار حلقو ں کے مطالبات تسلیم کر لے تو لانگ مارچ منسوخ کر سکتے ہیں :عمران خان

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت چار حلقو ں کے ہماے مطالبات تسلیم کر لے تو لانگ مارچ منسوخ کر سکتے ہیں ،ورنہ اب آخری معرکہ ہو گا ۔ عمران خان نے کہا کہ حکومت نامزد چیف جسٹس پاکستان جسٹس ناصر الملک کی سربراہی میں کمیشن بنائے جو 4 حلقوں میں ہونےوالی دھاندلی پر 2 ہفتے میں رپورٹ دے تو 14 اگست کا لانگ مارچ منسوخ کردیں گے ورنہ اب آخری معرکہ ہوگا اور ملک میں حقیقی جمہوریت کے لئے جنگ ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ ملک میں امن و امان کی خراب صورتحال اور مہنگائی میں اضافے نے ثابت کر دیا ہے کہ نوازشریف میں قیادت کی کوئی صلاحیت نہیں ہے ۔عمران خان نے کہا کہ آج ملک میں مہنگائی عروج پر ہے ، حکومت رمضان المبارک میں بھی عوام کو ریلیف دینے میں ناکام ہو چکی ہے ،لوگ خود کشیوں پر مجبور ہو چکے ہیں ،ملک میں امن و امان کی صورتحال انتہائی خراب ہو چکی ہے۔عمران خان نے کہا کہ فراڈ الیکشن سے بنی حکومت غیر قانونی ہے ،11مئی کو ملکی تاریخ کی سب سے بڑی دھاندلی کی گئی ،ملک کی خراب معاشی حالت کے پیش نظر الیکشن کو قبول کیا لیکن دھاندلی قبول نہیں کی ، مسلم لیگ (ن) پٹواریوں کے بغیر ایک بھی جلسہ نہیں کر سکتی ۔نجی ٹی وی کے پروگرام”کل تک “ میں گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جب تک ہم احتساب کی طرف نہیں جائیں گے تب تک ملک سے کرپشن ختم نہیں کی جا سکتی ۔ایک سوال کے جواب میں عمران خان نے کہا کہ کپتان کبھی وقت سے پہلے اپنا کوئی پتا شو نہیں کرتا، ہمارے مطالبات نہ مانے گئے تو حکومت کے خلاف آخری حد تک جائیں گے ۔

مزید :

اسلام آباد -Headlines -