لاہور ،سیالکوٹ ، پشاور اور کراچی پورٹس پر تاجروں کے کنٹینرز بروقت کلیئر کئے جائیں،سردار اظہر سلطان

لاہور ،سیالکوٹ ، پشاور اور کراچی پورٹس پر تاجروں کے کنٹینرز بروقت کلیئر کئے ...

لاہور ( آن لائن) لاہور ٹریڈرز رائٹس فورم کے صدر و نائب صدر انجمن تاجران ہال روڈ سرداراظہر سلطان نے کہا ہے کہ لاہور ،سیالکوٹ ، پشاور اور کراچی پورٹس پر تاجروں کے کنٹینرز کوبروقت کلیئر کیا جائے اور کسٹم کے عملہ کی تعداد کو بڑھایاجائے،اس کے ساتھ ساتھ حکومت سمگلنگ اور انڈر انوائسنگ کو روکنے کیلئے اقدامات کرے، کیونکہ سمگلنگ اور انڈر انوئسنگ کی وجہ سے نہ صر فحکومت کو سالانہ اربوں روپے ریونیو کا نقصان اٹھانا پڑتا ہے بلکہ ٹیکس ادا کرنے والے تاجر کو بھی شدید کاروباری مندے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز تاجروں کے اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہاکہ ماہ رمضان کے دوران مارکیٹوں میں کاروبار نہ ہونے کے برابر رہا ہے ،تاجر برادری راس استعمال کر کے ملازمین کے اخراجات برادشت کرتی رہی ہے ، مارکیٹوں میں ایک جانب کاروباری مندے کا رجحان ہے جبکہ دوسری جانب سمگلنگ مافیا نے پنجے گاڑ ھ رکھے ہیں جس کی وجہ سے ٹیکس ادا کئی گئی اشیاء اور سمگلنگ والی اشیاء میں قیمتوں کا توازن بگڑ چکا ہے

، انہوں نے کہ نظام حکومت چلانے کیلئے تاجرحکومت کوٹیکس دینا چاہتے ہیں تاہم حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ تاجروں کو کاروباری ماحول فراہم کرے ،اور اداروں کی کارکردگی کی سخت مانیٹرنگ کر کے ان کا قبلہ درست کیاجائے تاکہ سمگلنگ مافیا کی حوصلہ شکنی کی جائے ، انہوں نے کہاکہ شہروں کے مداخل پر تعینات اداروں کے اہلکاروں کی ذمہ داری ہے کہ وہ سمگلنگ مافیا کو روکیں اور سمگلنگ کا مال شہروں میں داخل نہ ہونے دیا جائے تاکہ ٹیکس ادا کرنے والے تاجر وں کو مناسب قیمتوں پر اپنی اشیاء فروخت کرنے کا موقع مل سکے#/s#

مزید : کامرس