ایف بی آر کا بینک اکاؤنٹس تک رسائی کا نہ رکنے والے سلسلہ تشویشناک ہے

ایف بی آر کا بینک اکاؤنٹس تک رسائی کا نہ رکنے والے سلسلہ تشویشناک ہے

لاہور(این این آئی ) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے قائم مقام صدر محمد ناصر حمید خان نے ایف بی آر کی جانب سے بینک اکاؤنٹس تک رسائی کے نہ تھمنے والے سلسلے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ان حالات میں جب تاجروں کا اپنا ہی سرمایہ بینکوں میں محفوظ نہیں اور وہ عدم تحفظ کا شکار ہیں، غیرملکی سرمایہ کاروں کو پاکستان میں آنے کی ترغیب کس طرح دی جاسکتی ہے۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے قائم مقام صدر نے کہا کہ وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ایف بی آر کی جانب سے ٹیکس دہندگان کے بینک اکاؤنٹس تک رسائی اور کاروباری یونٹس پر بلاجواز چھاپے مارنے کے معاملات کا نوٹس لیں کیونکہ اس سے تاجر برادری کی حوصلہ شکنی اور کاروباری ماحول خراب ہورہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بیوروکریسی تاجر برادری میں خوفو ہراس پھیلاکر معاشی بحالی کے لیے اٹھائے جانے والے اقدامات کو ناکام بنانے پر تلی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نے کہا کہ فیڈرل بورڈ آفریونیو کی جانب سے ایسے اقدامات کی وجہ سے نہ صرفٹیکس دہندگان کو شدید مشکلات کا سامنا ہے بلکہ غیرملکی سرمایہ کاروں نے بھی انتہائی محتاط رویہ اپنارکھا ہے جو معیشت کے لیے زہر قاتل ہے۔انہوں نے کہا کہ بینک اکاؤنٹس تک رسائی اور قوم نکلوانا آخری قدم ہونا چاہیے لیکن ریجنل ٹیکس آفسز/لارج ٹیکس پیئر یونٹس ٹیکس اہدافپورے کرنے کے لیے فوری طور پر انتہائی قدم اٹھا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کوٹیکس نیٹ کو وسعت دینے اور انڈر انوائسنگ و سمگلنگ پر قابو پانے کے لیے اقدامات اٹھانے چاہئیں لیکن یہ واجبات کی وصولی کے نام پر ٹیکس دہندگان کے بینک اکاؤنٹس تک رسائی حاصل کرکے حالات بگاڑنے میں مصروف ہے۔محمد ناصر حمید خان نے نے کہا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو ایماندار ٹیکس دہندگان کا شکرگزار ہونا چاہیے جو ٹیکس کی ادائیگی کی صورت میں اپنا قومی فریضہ بہ احسن ادا کررہے ہیں لیکن اس کے برعکس انہیں نشانِ عبرت بنایا جارہا ہے۔

مزید : کامرس