جے آئی ٹی کی وزیر اعظم کے کزن طارق شفیع سے 3گھنٹے پوچھ گچھ،حسن نواز ، اسحاق ڈار آج ، حسین نواز کل ، مریم نواز بدھ کو پیش ہونگی

جے آئی ٹی کی وزیر اعظم کے کزن طارق شفیع سے 3گھنٹے پوچھ گچھ،حسن نواز ، اسحاق ...

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک 228 ایجنسیاں) وزیر اعظم نواز شریف کے کزن طارق شفیع پاناماجے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوئے جہاں ان سے 3 گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی۔ ذرائع کے مطابق طارق شفیع سے حدیبیہ پیپرزملزاور گلف سٹیل ملز سے متعلق تفتیش کی گئی۔پیشی کے بعد میڈیا کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے کوئی دستاویز جمع کرائی نہ ہی انہیں دوبارہ طلب کیا گیا ہے۔ جے آئی ٹی کے رویہ سے متعلق سوال کے جواب پر طارق شفیع نے کہا کہ آج یہ لوگ بہت اچھے ہو گئے ہیں ۔مجھے دوبارہ طلبی کے حوالے سے کچھ نہیں بتایا گیا۔مجھ سے پوچھے گئے زیادہ تر سوالات گلف سٹیل سے متعلق تھے۔مالی لین دین کے بارے میں بھی پوچھا گیا ہے ۔قبل ازیں طارق شفیع جوڈیشل اکیہڈمی پہنچے تو وزیر مملکت عابد شیر علی ان کی گاڑی ڈرائیو کر رہے تھے۔ عابد شیر علی کو باہر ہی روک لیا گیا جب کہ طارق شفیع اندر چلے گئے ۔واضح رہے کہ طارق شفیع نے مبینہ طورپرگلف اسٹیل ملزکی فروخت کے بعد 12 ملین درہم قطری شاہی خاندان کے حوالے کئے تھے۔ طارق شفیع اتفاق فانڈریز کا حصہ رہے اورشریف خاندان کے دبئی میں کاروبار کی دیکھ بھال کرتے رہے ہیں،وہ شفیع گروپ آف کمپنیز کے ڈائریکٹر ہیں، وہ شوگر ملز،اسٹیل ملز اور پولٹر ی فیڈزکے پیداواری یونٹ چلاتے ہیں۔ طارق شفیع نے سپریم کورٹ میں پیش کئے گئے بیان حلفی میں کہا کہ انہوں نے 1980 میں 12 ملین درہم قطر کے شیخ فہد بن جاسم بن جابر الثانی کو نقد ادا کئے تھے۔طارق شفیع شریف خاندان کی دوبئی سٹیل ملز میں شراکت دار تھے اور ملز کی فروخت کے معاہدے پر بھی ان کے دستخط ہیں، سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران درخواست گذاروں اور عدالت نے طارق شفیع کے حلفیہ بیانات میں دستخطوں میں مماثلت نہ ہونے کی نشاندہی کی گئی تھی۔طارق شفیع اس سے قبل بھی جے آئی ٹی میں پیش ہو چکے ہیں جس کے بعد انہوں نے جے آئی ٹی پر نامناسب سلوک کا الزام عائد کیا تھا مسلم لیگ ن کے رہنماں نے دعوی کیا تھا کہ جے آئی ٹی نے طارق شفیع پر وعدہ معاف گواہ بننے کے لئے دبا ڈالاتھا۔پاناما کیس کی تحقیقات حتمی مرحلے میں داخل ہو گئی ہے حسن نواز(آج)،حسین نواز(کل)،مریم نوازبدھ کومشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوں گی۔ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم رواں ہفتے وزیراعظم کے تینوں بچوں سے تفتیش کرے گی ۔واضح رہے کہ جے آئی ٹی نے حسن نواز کو تیسری مرتبہ، حسین نواز کو چھٹی مرتبہ جبکہ مریم نواز کو پہلی بار طلب کیا ہے ۔جے آئی ٹی میں وزیراعظم نوازشریف ،وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف اوران کے کزن طارق شفیع بیان قلمبندکراچکے ہیں ۔میڈیارپورٹس کے مطابق جے آئی ٹی میں وزیرخزانہ اسحق کی بھی طلبی کا امکان ہے۔ تحقیقاتی ٹیم حتمی رپورٹ دس جولائی کو سپریم کورٹ کے تین رکنی خصوصی بنچ کو پیش کرے گی ۔ دریں اثناجے آئی ٹی نے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو طلب کرلیا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق آج وزیر اعظم نواز شریف کے چھوٹے صاحبزادے صبح 11 بجے جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوں گے۔ حسن نواز کی پیشی کے بعد وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار بھی جے آئی ٹی کے روبرو پیش ہوں گے۔ انہیں سہ پہر 3 بجے پیشی کیلئے طلب کیا گیا ہے۔جے آئی ٹی کی جانب سے اسحاق ڈار کو ضروری دستاویزات بھی ساتھ لانے کی ہدایت کی گئی ہے

جے آئی ٹی

مزید : صفحہ اول