مون سون بارشوں کی ممکنہ آمد اور تخت بھائی میں نکا سی آب کا ناقص نظام

مون سون بارشوں کی ممکنہ آمد اور تخت بھائی میں نکا سی آب کا ناقص نظام

تخت بھائی(تحصیل رپورٹر)مون سون کی بارشوں کی ممکنہ آمد اور تخت بھائی میں نکا سی آب کی ناقص نظام۔ ملک بھر میں مون سون کے بارشوں کے آغاز اور ان سے ہونے والے نقصانات کے پیش نظر تخت بھائی سٹی بھی ممکنہ تباہی کے دہانے پر آگئی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق تخت بھائی سٹی میں تمام چھوٹے بڑے برساتی نالوں کی عدم صفائی اور ناقص نظام کی وجہ سے تخت بھائی میں نکاسی آب کی صورت حال خطرناک حد تک بگڑ چکی ہے جس کی اصل وجہ تخت بھائی فلائی اوور کی تعمیر کے بعد پل کے نیچے دونوں اطراف کی روڈ کی عدم پختگی اور نکاسی آب نالیوں کی تاحال عدم تعمیر سے معمولی بارش میں سڑک تالاب بن جاتے ہیں مون سون کی بارشوں میں وارڈ نمبر 3پیرانو ڈاگ شوگر مل ریلوے لائن روڈ گل بہار کالونی افضل امام کالونی تحصیل کلے قاسم کالونی مزدور آباد ،عبد اللہ جان کلے ، آمیر محمد خان کلے ، غر کلے ، ملز کالونی ریلوے پھاٹک نمبر 1سے کوٹ روڈ تک ریلوے سٹیشن کالونی ، سگنل محلہ ،کوچیانو روڈ شیر علی بابا کورونہ ،میاں محب شاہ محلہ ، محلہ مسلم آباد،1 .مسلم آباد 2شریف آباد ۔ کالج کالونی ہمیش کلے۔ کامران کلے ،جاوید خان کلے انے والی بارشوں میں سیلابی تباہی کی ضد میں آسکتی ہے جس کی ایک وجہ مزدور آباد کوٹ روڈ سے نکلی ہوئی مین ڈرین کی عدم صفائی ہے جس سے پانی مین روڈ پر آکر رہائشی علاقوں داخل ہو تی ہے تخت بھائی شہر کے تمام برساتی اور دیگر نالیاں گند سے آٹکی ہوئی ہے جو نکاسی آب کا دباو برداشت کرنے کے قابل نہیں بلدیہ تخت بھائی کے منتخب ناظمین اور متعلقہ احکام نے ا س گھمبیر صورت حال پر آنکھیں بند کرکے خاموشی اختیار کرلی ہے جو کہ آنے والے دنوں میں ایک بہت بڑے المیہ کا سبب ہو سکتا ہے تخت بھائی کے سیاسی سماجی حلقوں نے موجودہ صورتحال لے پیش نظر صوبائی وزیر بلدیات وزیر اعلیٰ کے پی کے سیکر ٹری بلدیات ضلعی ناظم کمشنر مردان اور دیگر متعلقہ احکام سے بر وقت انتظامات کا مطالبہ کیا ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر