سی اینڈ ڈبلیو میں غیر قانونی بھرتی ،ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ آفس ملاکنڈ سے رپورٹ طلب

سی اینڈ ڈبلیو میں غیر قانونی بھرتی ،ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ آفس ملاکنڈ سے رپورٹ طلب

بٹ خیلہ(بیورو رپورٹ )مالاکنڈمیں تبدیلی اگئی محکمہ سی اینڈڈبلیومالاکنڈمیں غیرقانونی طورپرچھ اہلکاربھرتی تین اہلکاروں کے تنخوہیں پاس ہونے پر اے جی افس پشاورنے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افس مالاکنڈسے رپورٹ طلب کرلی ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی حکومت کی جانب سے صوبے میں میرٹ کے تمام دعوے جھوٹ کاپلندہ ہے محکمہ سی اینڈڈبلیومالاکنڈمیں کچھ عرصہ قبل چھ اہلکاروں کوخفیہ طریقے سے بغیراخباری اشتہارٹسٹ وانٹرویوبھرتی کیاگیاہے۔پی ڈبلیوڈی لیبریونین کے شکایت پراے جی افس پشاورنے اس غیرقانونی بھرتیوں کانوٹس لیکرڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افس مالاکنڈسے رپورٹ طلب کرلی ہے۔اے جی افس کی جانب سے رپورٹ طلب کرنے پرڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افس مالاکنڈنے محکمہ سی اینڈڈبلیومالاکنڈسے رپورٹ مانگ لیاہے مگرایک ہفتے سے زیادہ عرصہ گزرنے کے باوجود محکمہ سی اینڈڈبلیومالاکنڈنے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افس مالاکنڈکورپورٹ ارسال نہیں کی گئی ہے۔ذرائع نے بتایاکہ ایک حکومتی اہلکاران غیرقانونی طریقے سے بھرتی ہونے والے ملازمین کے تنخواہے پاس کرنے کیلئے ڈسٹرکٹ اکاؤنٹ افس مالاکنڈخودگئے تھے۔محکمہ سی اینڈڈبلیومالاکنڈمیں خفیہ طورپرغیرقانونی بھرتی ہونے پرعلاقے کے مختلف سیاسی سماجی اورعوامی حلقوں نے شدیدغم وغصے اظہارکرتے ہوئے تبدیلی کے دعویدارپاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان ،وزیراعلیٰ خیبرپختونخواپرویزخٹک ،صوبائی وزیراکبرایوب خا ن ،چیف جسٹس سپریم کورٹ ،چیف جسٹس ہائی کورٹ ،کمشنرمالاکنڈ،محکمہ نیب ،محکمہ انٹی کرپشن کے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیاہے کہ وہ محکمہ سی اینڈڈبلیومالاکنڈمیں غیرقانونی خفیہ بھرتیوں کافی الفورنوٹس لیکرغیرقانونی بھرتیوں میں ملوث اہلکاروں کے خلاف قانونی کاروائی کرکے قرارواقعی سزادی جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر