وزیر اعظم کا پیکیج کسی صورت منظور نہیں‘ متاثرین پاڑا چنار

وزیر اعظم کا پیکیج کسی صورت منظور نہیں‘ متاثرین پاڑا چنار

پاراچنار ( نمائندہ خصوصی) ایم ڈبلیو ایم کے رہنماوں نے کہا ہے کہ پاراچنار میں دہشت گردی متاثرین کیلئے وزیراعظم کی جانب سے اعلان کیا گیا پیکج ملک کے دیگر علاقوں سے کم ہونے کی صورت میں قبول نہیں کرینگے کیونکہ پاراچنار کے قبائل بھی محب وطن پاکستانی ہیں اور ملک کی خاطر ہر محاذ پر تن من دھن کی قربانی پیش کی ہے‘ پاراچنار میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت المسلمین کے صوبائی رہنما علامہ حمید حسین امامی ، سیکٹری جنرل شبیر ساجدی اوردیگر رہنماوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ اپنے جائز حقوق کی حصول کیلئے بھی ہمیں احتجاج کرنا پڑتا ہے اور حکام سے التجا کرنی پڑتی ہے۔ رہنماوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے پاراچنار کے دھشت گردی متاثرین کیلئے جو پیکج اعلان کیا ہے ملک کے باقی حصوں سے کم امداد کسی صورت قبول نہیں کرینگے رہنماوں نے کہا کہ دیگر علاقوں میں دھشت گردوں کے واقعات کے زخمیوں کو دس لاکھ روپے دیئے جاتے ہیں جبکہ جان بحق افراد کو بیس لاکھ روپے دیئے جاتے ہیں اور سرکاری ملازمت بھی دی جاتی ہے۔ رہنماوں نے چیف آف آرمی ساٹف سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ پاراچنار کے دورے کے موقع پر کئے گئے اپنے وعدے کو پورا کریں جس میں انہوں نے کہا تھا کہ پاراچنار شہر کے دھشت گردی متآثرین کو دیگر علاقوں کے برابر امداد دی جائے گی اور ملک میں یکساں پالیسی چلائی جائے گی۔ رہنماوں نے کہا کہ پاراچنار ہسپتال میں صرف ان لوگوں کو زخمی سرٹیفیکیٹ جاری کئے جاتے ہیں جن کے اعضاء کٹ گئے ہوں یا کوئی ہڈی ٹوٹ گئی ہو اس کرائیٹیریا پر پورا نہ اترنے والوں کو معمولی زخمی کی سرٹیفیکیٹ جاری کی جاتی ہے اور معمولی زخمیوں کو معاوضہ نہیں دیا جاتا ہے رہنماوں نے مطالبہ کیا کہ وزیر اعظم اور متعلقہ حکام پاراچنار کی دھشت گردی متاثرین کی داد رسی کریں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر