بھارت کی معروف اداکارہ نے اذان کے بارے میں ایسی شاندار بات کہہ دی کہ سونو نگھم بھی منہ چھپاتے پھریں گے

بھارت کی معروف اداکارہ نے اذان کے بارے میں ایسی شاندار بات کہہ دی کہ سونو ...
بھارت کی معروف اداکارہ نے اذان کے بارے میں ایسی شاندار بات کہہ دی کہ سونو نگھم بھی منہ چھپاتے پھریں گے

  

ممبئی ( ڈیلی پاکستان آن لائن) مشہور بالی ووڈ اداکارہ کالکی کوچلن نے کہا ہے کہ اذان کو شور قرار دینا صحیح نہیں ہے ، بھارت میں مختلف مذاہب کے لوگوں کی عبادت کرنے کا طریقہ الگ ہے ۔بھارتی ادا کارہ نے شور کے نام سے ایک ویڈیو میں دکھایا ہے کہ بھارت میں لوگوں کو روزانہ کس قسم کی آوازوں کا سامنا رہتا ہے۔ اس موقع پر کالکی کوچلن نے کہا کہ کہا ہے کہ اذان کو شور قرار دینا کسی طرح بھی صحیح نہیں ہے۔واضح رہے کے بھارتی گلو کار سونو نگھم کی جانب سے اذان کے خلاف بیان دینے کے بعد سوشل میڈ یا پر کافی ہنگامہ برپا ہو گیا تھا اور گلوکار کو نہ صرف سوشل میڈ یا صارفین بلکہ بالی ووڈ سے بھی مخالفت کا سامنا کرنا پڑا ۔سونونگم نے مائیکربلاگنگ ویب سائٹ پر اذان کو شور قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ آخر بھارت میں یہ جبری مذہب پرستی کب ختم ہو گی ، ان کے پیغامات نے بھارت سمیت دنیا بھر میں مقیم تمام مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کر دیا تھا تاہم بعد میں انہیں اپنے بیانات پر معافی مانگنی پڑی تھی۔

کالکی نے مزید کہا کہ بھارت میں مختلف مذاہب سے تعلق رکھنے والے لوگ رہتے ہیں جن کی عبادت کرنے کا طریقہ الگ ہے ، کچھ لوگ مسجد ، کچھ چرچ اور کچھ مندر جاکر عبادت کرتے ہیں اور ان عبادت گاہوں میں مختلف طرح کی آوازیں ہر وقت سنائی دیتی رہتی ہیں ، اس کے علاوہ بھی ہمارے ارد گرد بہت سی آوازوں کا شور سنائی دیتا ہے ، جیسے موبائل فون کی آواز ، خبروں کی آواز ، مختلف موضوعات پر اپنی رائے دینے والے لوگوں کی آوازیں اور ہم ان تمام آوازوں کو بنا کوئی سوال کیے قبول کرلیتے ہیں ، لیکن “اذان” کی آواز کو بنیاد بنا کر اسے شور قرار دینا صحیح نہیں ہے۔

مزید : تفریح