سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کیلئے بری خبر آگئی، اب پیسے دینے پڑیں گے

سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کیلئے بری خبر آگئی، اب پیسے دینے پڑیں گے
سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کیلئے بری خبر آگئی، اب پیسے دینے پڑیں گے

  

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) تیل کی قیمتوں میں مسلسل کمی کے باعث سعودی عرب شدید مالی بحران سے دوچار ہے جس پر قابو پانے کے لیے وہ طرح طرح کے اقدامات اٹھا رہا ہے۔ اس سلسلے میں سعودی حکومت اب تک کئی شعبوں میں غیرملکیوں کے نوکری کرنے پر بھی پابندی عائد کر چکی ہے اور کئی نئے ٹیکس بھی لاگو کر چکی ہے۔ اب وہاں تارکین وطن پر ایک اور پابندی لگا دی گئی ہے۔ عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق نئی پابندی کے تحت تارکین وطن پر اپنے زیرکفالت افراد کی فیس پیشگی ادا کرنا لازمی قرار دے دیا گیا ہے۔

اگر آپ کے پاس ان ممالک کا ڈرائیونگ لائسنس ہے تو آپ متحدہ عرب امارات میں مزے سے بغیر لائسنس گاڑی چلا سکتے ہیں ،بڑااعلان ہو گیا

رپورٹ کے مطابق جنرل ڈائریکٹوریٹ آف پاسپورٹ کی طرف سے جاری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ ”تارکین وطن آج کے بعد اپنے اقامہ کی تجدید اور ملک سے باہر جانے اور واپس آنے کے ویزوں کے حصول سے قبل اپنے زیرکفالت افراد کی فیس ادا کرنے کے پابند ہوں گے۔ فیس کی ادائیگی کے بغیر نہ تو ان کے اقامہ کی تجدید ہو گی اور نہ ہی انہیں ایگزٹ اور ری انٹری ویزے دیئے جائیں گے۔“واضح رہے کہ مالی بحران کے باعث سعودی حکومت نے 2016ءمیں تارکین وطن پر اپنے زیرکفالت افراد کی فیس لاگو کی تھی، جو فی کس 100ریال (تقریباً 2800روپے) ماہانہ ہے۔ جولائی 2018ءمیں یہ فیس 200ریال(تقریباً5600روپے)، 2019ءمیں 300ریال (تقریباً8ہزار 400روپے)اور 2020ءمیں بڑھا کر 400ریال (تقریباً 11ہزار 184روپے) کر دی جائے گی۔

مزید : عرب دنیا