ذہنی معذور خاتون پر ہجوم کا تشدد، مارنے سے پہلے ٹریکٹر سے باندھ کر سر بھی مونڈ دیا، پولیس مقدمہ درج کرنے سے انکاری

ذہنی معذور خاتون پر ہجوم کا تشدد، مارنے سے پہلے ٹریکٹر سے باندھ کر سر بھی ...
ذہنی معذور خاتون پر ہجوم کا تشدد، مارنے سے پہلے ٹریکٹر سے باندھ کر سر بھی مونڈ دیا، پولیس مقدمہ درج کرنے سے انکاری

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت خواتین پر تشدد اور جنسی حملوں کی وجہ سے دنیا بھر میں بدنام تو ہے ہی مگر مغربی بنگال کے ایک گاﺅں میں ذہنی طور پر معذور خاتون پر گاﺅں والوں نے ایسا بہیمانہ تشدد کیا کہ انسانیت بھی شرما گئی، مذکورہ خاتون پر دس سالہ لڑکے کے اغوا کا الزام لگایا گیا تھا۔

پاکستان کا سب سے زیادہ تعلیم یافتہ گاﺅں زندگی کی بنیادی سہولیات محروم ، شہری حقوق کے لئے سڑکوں پر نکل آئے

ڈیلی میل کے مطابق مغربی بنگال کے ایک گاﺅں میں ذہنی طور پرمعذور42سالہ اوتیرا بی بی اپنے گھر سے بھول کر نواحی گاﺅں میں چلی گئی جہاں پر اسے ایک دیہاتی نے اپنے 10سالہ بچے کے اغوا کا الزام لگا کر گھر کے اندر بند کردیا کچھ دیر کے بعد درجنوں دیہاتی آگئے اور انہوں نے خاتون کو ٹریکٹر سے باندھ کر تشدد کا نشانہ بنایا ، اس کے سر کے بال مونڈ دئیے، خاتون نے اپنے بچاﺅ کے لئے کوششیں کی مگر وہ مشتعل ہجوم سے خود کو بچا نہیں سکی، مقامی پولیس نے ہجوم کو قابو کرنے کے لئے ہوائی فائرنگ کی، خاتون کو لے کر ہسپتال گئی لیکن وہ ہسپتال کے راستے ہی میں دم توڑ گئی۔ پولیس مشتعل ہجوم کے خلاف مقدمہ قائم کرنے سے بھی انکار کردیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس