ٹیکس ایمنسٹی سکیم میں توسیع احسن اقدام ، ملک میں سرمایہ آئے گا‘اکانومی واچ

ٹیکس ایمنسٹی سکیم میں توسیع احسن اقدام ، ملک میں سرمایہ آئے گا‘اکانومی واچ

اسلام آباد(آن لائن) پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ نگران حکومت کی جانب سے ٹیکس ایمنسٹی سکیم کی ڈیڈ لائن میں توسیع احسن اقدام ہے جس سے ملک میں سرمایہ آئے گا۔اس اقدام سے کاروباری برادری کے اعتماد اور نگران حکومت کی ساکھ میں اضافہ ہو ا ہے۔اس سکیم میں توسیع کے فیصلے سے جہاں نگران حکومت کی غیر جانبداری اور غیر متعصب رویہ ثابت ہو گیا وہیں ملک کی کمزور اقتصادی حالت بھی بے نقاب ہو گئی جو سابق حکومت کی کارستانی ہے۔ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ ملک کو ترقی کی راہ پر ڈالنے کا ڈھول پیٹنے والی سابق حکومت نے اپنی حکومت کے دوران پینتالیس ارب ڈالر سے زیادہ کا قرضہ لیا جس کا بڑا حصہ ضائع کر دیا گیا ورنہ آج زرمبادلہ کے ذخائر کی صورتحال بہتر ہوتی،ملک دیوالیہ نہ ہو رہا ہوتا۔ مرکزی بینک کے زرمبادلہ کے زخائر تشویشناک حد تک کم ہو گئے ہیں جن میں سے ماہانہ ایک ارب ڈالر کی کمی واقع ہو رہی ہے۔ حکومت کی کل آمدنی بھی ملک چلانے کیلئے ناکافی ہے۔بڑھتی ہوئی درامدات، برامدات کی کمی اور گزشتہ پانچ سال کی لوٹ مار نے آمدنی اور اخراجات میں فرق پچیس ارب ڈالر تک بڑھا دیا ہے جس کا واحد حل آئی ایم ایف سے سخت شرائط پر قرضے کا حصول ہے۔ڈالر جو آمریت میں ساٹھ روپے کا تھا گزشتہ دو جمہوریتوں کی مہربانی سے ایک سو پچیس روپے کا ہو چکا ہے اور اسکی قیمت مزید بڑھ سکتی ہے۔ روپے کی قدر کم کرنے سے تمام درامدی اشیاء مہنگی ہو رہی ہیں جس سے عوام پر ناقابل برداشت بوجھ پڑ رہا ہے۔

مزید : کامرس