مون سون ، ایل ڈی اے کے انجینئرز کو پانی کی نکاسی کا ٹاسک مل گیا ، 2ماہ تک چھٹیاں بند

مون سون ، ایل ڈی اے کے انجینئرز کو پانی کی نکاسی کا ٹاسک مل گیا ، 2ماہ تک ...

لاہور(جنرل رپورٹر) لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی ڈائریکٹر جنرل آمنہ عمران خان کی ہدایت پر چیف انجینئر مظہر حسین خان نے مون سون کے دوران شہر سے نکاسی آب یقینی بنانے کے لیے واسا کی معاونت کرنے کی خاطر ایل ڈی اے یوڈی ونگ کے تمام انجینئرز کی ڈیوٹیاں لگا دی ہیں اور دو ماہ کے لیے عملے کی اتفاقیہ رخصت بند کر دی ہے ۔چیف انجینئر ایل ڈی اے نے گزشتہ روز ایل ڈی اے انجینئرنگ ونگ کے تمام ڈائریکٹرز‘ڈپٹی ڈائریکٹرز ‘ اسسٹنٹ ڈائریکٹرز‘ سب انجینئرز اور کنٹریکٹرز کا اجلاس طلب کر کے انہیں ان کی ذمہ داریوں سے آگاہ کیا۔فوری نکاسی آب کے لیے واسا کی معاونت کی خاطر لاہور شہر کو چھ زونز میں تقسیم کر کے ایک ایک ڈائریکٹر انجینئرنگ کو ہر زون کا انچار مقرر کر دیا اور انہیں ہدایت کی کہ دن رات کے دوران کسی بھی وقت بارش شروع ہوتے ہی فوراً ڈیوٹی پر نکل پڑیں اور اپنے سٹاف اور مشینری کے ساتھ واسا کی معاونت کریں۔ اس سلسلے میں از خود کام کے لیے نکلیں اور کسی حکم یا ہدایت کا انتظار نہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ وہ خود افسران اور عملے کی کارکردگی کی مانیٹرنگ کریں گے اور فرائض سے غفلت برتنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔دریں اثناء لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی ڈائریکٹر جنرل آمنہ عمران خان نے ایل ڈی اے کے ون ونڈو سیل کو مزید موثر بنانے کے لئیپلاٹوں کی ٹرانسفر ‘ این او سی کے اجرا ، نقشوں کی منظوری اور دیگر امور کے بارے میں ایس او پیز کو سادہ اور سہل بنانے کی ہدایت کی ہے اور اس مقصد کی خاطر متعلقہ ڈائریکٹروں سے دو روز کے اندر اندر تجاویز و سفارشات طلب کر لی ہیں گزشتہ روز انہوں نے ایل ڈی اے افسران کو ہدایت کی شہریوں کی درخواستوں پر دیئے گئے وقت کے اندر عملدرآمد یقینی بنایا جائے ۔ شہریوں کو ریلیف کی بجائے تکلیف دینے والوں سے سختی سے نپٹا جائے گا اور درخواستوں پر بلا وجہ اعتراضات لگانے اور غیر متعلقہ جوابات دے کر تاخیری حربے ا ستعمال کرنے والوں کے خلاف سخت انضباطی کارروائی کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ عملے کی طرف سے تاخیری حربوں اور بدعنوانی کی شکایات دور کرنے کے ساتھ ساتھ غیر متعلقہ افراد کا عمل دخل بھی ختم کیا جائے گا

مزید : میٹروپولیٹن 1