ملتان‘ ذخیرہ اندوزوں‘ منافع خوروں کیخلاف گرینڈ آپریشن کا حکم‘ ٹیمیں تیار

ملتان‘ ذخیرہ اندوزوں‘ منافع خوروں کیخلاف گرینڈ آپریشن کا حکم‘ ٹیمیں تیار

ملتان(سپیشل رپورٹر)ڈپٹی کمشنر ملتان نے پرائس مجسٹریٹس کو اشیائے ضروریہ مقررہ نرخوں سے زائد قیمت پر فروخت کرنے والوں کے خلاف گرینڈ آپریشن کرنے کا حکم دیا ہے اور کہا ہے کہ مصنوعی مہنگائی کا سبب بننے والے ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کو بھاری جرمانے کئے جائیں اور ان کے خلا ف مقدمات درج کئے جائیں۔ انہوں نے بہتر کارکردگی نہ دکھانے والے پرائس مجسٹریٹس کو شوکاز نوٹس(بقیہ نمبر33صفحہ12پر)

جاری کرنے کی ہدایت کردی ہے۔اپنے آفس کے کمیٹی روم میں پرائس مجسٹریٹس سے خطاب کرتے ہوئے انہو ں نے کہا کہ بجٹ کی آڑ میں بعض عناصر نے اشیائے ضروریہ کی قیمتیں کئی گنا بڑھا دی ہیں جس سے عام آدمی متاثر ہورہا ہے۔ انہو ں نے کہا کہ حکومت نے ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کا حکم دیا ہے۔ڈپٹی کمشنر نے کہا پرائس مجسٹریٹس مختلف بازاروں کا وزٹ کریں اور مقررہ کردہ نرخ سے زائد قیمت پر اشیاء فروخت کرنے والوں کے ساتھ کوئی رعایت نہ کی جائے۔انہوں نے کہا کہ مہنگے داموں اشیاء بیچنے والوں کو موقع پر گرفتار کیاجائے۔ انہوں نے کہا کہ جن مجسٹریٹس کی کارکردگی اچھی ہوگی انہیں تعریفی سرٹیفیکیٹ دیئے جائیں گے جبکہ ناقص کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والوں کے محکمہ کے سیکرٹری کو اس بارے آگاہ کیاجائے گااور انہیں شوکاز نوٹس بھی جاری کئے جائیں گے۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو آغا ظہیر عباس شیرازی نے اس موقع پر بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ گزشتہ تین ماہ کے دوران مہنگے داموں اشیائے ضروریہ فروخت کرنے والے دکانداروں کو 75لاکھ 60ہزارروپے جرمانہ کیاگیا اور 85ایف آئی آرز درج کی گئیں۔ اجلاس میں ملتان سٹی، صدر، شجاع آباد، جلال پور پیروالا کے اسسٹنٹ کمشنر ز اور مختلف محکموں کے افسران نے شرکت کی۔بعدا زاں سرکاری واجبات کی وصولیوں کے حوالے سے ریونیو افسران پر مشتمل اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر عامر خٹک نے کہا کہ سرکاری واجبات کی وصولی کا عمل تیز کیا جائے،100 فیصد ریکوری کو یقینی بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ جن مواضعات کے لینڈ ریکارڈ کو ابھی تک کمپیوٹرائز ڈ نہیں کیاجاسکا اس پر کام کی رفتار کو تیز کیا جائے۔ عامر خٹک نے کہا کہ ریونیو کا محکمہ حکومت کے لئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے اسے اپنی کارکردگی دکھانے کے لئے لیڈنگ رول ادا کرنا چاہیے اور دیگر محکموں کے لئے مثال بننا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ 545مواضعات میں سے 488آن لائن ہوگئے ہیں۔ انہوں نے ہدایت کی کہ دیگر مواضعات کے ریکارڈ پر تیزی سے کام کیاجائے تاکہ انہیں بھی جلد کمپیوٹرائز ڈ کیا جاسکے۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ریونیو آغا ظہیر عباس شیرازی نے اس موقع پر بتایا کہ زرعی انکم ٹیکس کی مد میں 100فیصد آبیانہ میں 81فیصد اور سٹیمپ ڈیوٹی کی مد میں 94فیصد ریکوری کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ایف بی آر کے ٹیکس میں اب تک ایک کروڑ 84لاکھ کی ریکوری کی گئی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر