ضلعی انتظامیہ 5روپے کی 70گرام وزن روٹی کی اجات دینے پر ڈٹ گئی 

ضلعی انتظامیہ 5روپے کی 70گرام وزن روٹی کی اجات دینے پر ڈٹ گئی 

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)ضلعی انتظامیہ پانچ روپے کی 70گرام وزن روٹی کی اجازت دینے پرڈٹ گئی، نانبائی ایسوسی ایشن کاانتظامیہ کے فیصلے کوماننے سے انکار،اجلاس کے بعدنعرہ بازی اورضلعی انتظامیہ کے فیصلے کے خلاف ہڑتال کا اعلان کردیا۔تفصیلات کے مطابق عوامی مطالبے پرڈپٹی کمشنر ڈیرہ محمدعمیرکی خصوصی ہدایت پراسسٹنٹ کمشنر یوٹی نعمان وزیرکی زیرصدارت سرکٹ ہاؤس میں پرائس ریویو کمیٹی کاہنگامی اجلاس پانچ روپے کی 70گرام وزن روٹی کی فروخت کے حوالے سے منعقدہوا۔ اجلاس میں ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولرمحمودالرحمان،اسسٹنٹ فوڈکنٹرولر چوہدری خلیق الرحمان،انسپکٹرسردارجنیداحمدگنڈہ پور،حاجی اللہ بخش سپل،چوہدری جمیل احمد،نعیم قریشی کے علاوہ نانبائی ایسوسی ایشن کے صدر اللہ مہر،چوہدری آصف علی سمیت دیگرعہدیداران شریک تھے۔ اجلاس میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے نانبائی ایسوسی ایشن کو آگاہ کیاگیاکہ سابقہ اجلاس کے دوران نانبائی ایسوسی ایشن کے مطالبے پر150گرام وزن کی روٹی دس روپے میں فروخت کرنے کا فیصلہ ہواجوابھی تک برقرارہے لیکن عوامی مطالبے پرغریب، مزدوراورنادارلوگوں کی سہولت کے لیے اب دوبارہ دس روپے کی روٹی کے ساتھ ساتھ پانچ روپے کی روٹی بھی 70گرام وزن کے ساتھ فروخت کی جائے۔اجلاس کے بعدنانبائی ایسوسی ایشن نے ضلعی انتظامیہ کے اس فیصلے کو مستردکرتے ہوئے نعرے بازی کی اورجلوس کی شکل میں روانہ ہوئے۔ اس موقع پر نانبائی ایسوسی ایشن کے صدراللہ مہرنے میڈیاکو بتایاکہ ہم دس روپے کی روٹی 150گرام وزن کے ساتھ ہی فروخت کریں گے۔ پانچ روپے کی روٹی 70گرام وزن کے ساتھ فروخت کرنے کے فیصلے کو تسلیم نہیں کرتے۔ انہوں نے اس موقع پر اس فیصلے کے خلاف مکمل ہڑتال کرنے کا اعلان بھی کیادوسری جانب ضلعی انتظامیہ نے اپنے فیصلے پرعمل درآمدکرانے کافیصلہ کیاہے اورخلاف ورزی کرنے والے نانبائیوں کے خلاف فوری کاروائی کا عندیہ دیاہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر