ایران نے گیس پائپ لائن مکمل نہ کرنے پر پاکستان کو نوٹس بھیج دیا،وزارت پٹرولیم

  ایران نے گیس پائپ لائن مکمل نہ کرنے پر پاکستان کو نوٹس بھیج دیا،وزارت ...

اسلام آباد (این این آئی) قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی توانائی کو سیکرٹری پٹرولیم نے بتایا ہے کہ ایران نے گیس پائپ لائن مکمل نہ کر نے پر پاکستان کو نوٹس دیا ہے، جواب دینے کیلئے مشاورت جاری ہے،ایران کو جواب دینے کیلئے اٹارنی جنرل سے بھی مشاورت کر رہے ہیں۔تاپی پائپ لائن منصوبے کا سنگ بنیاد اس سال اکتوبر میں رکھ دیں گے۔قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی توانائی کا اجلاس عمران خٹک کی زیر صدارت ہوا جس میں سیکرٹری پٹرولیم میاں اسد حیاء الدین نے کہاکہ ملک میں مقامی گیس پیداوار کم ہو رہی ہے،ہمیں درآمدی ایل این جی پر زیادہ انحصار کر نا پڑتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ گیس کی مقامی پیداوار بڑھانے کیلئے بلوچستان اور کے پی کے امن و امان کے مشکل علاقوں میں نئی گیس پیداوار پر زیادہ ریٹس دینگے۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے اس سلسلے میں سمری مشترکہ مفادات کو بھیجی ہے، دسمبر تک ملک میں تیل اور گیس کی تلاش کیلئے 20نئے بلاکس کیلئے بولی کرائیں گے۔انہوں نے کہاکہ ملک میں 3 سے 6 ارب مکعب فٹ یومیہ گیس کی قلت ہے،قبائلی علاقوں اور بلوچستان پر مشتمل فرنٹئیر زون کے قیام کی تجویز دی ہے۔ انہوں نے کہاکہ پانچ بلاکس کی نیلامی کی ہے دسمبر تک 20 نئے بلاکس کی نیلامی کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ ایک جامع پٹرولیم پالیسی بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ملک میں کام کرنے کیلئے اس وقت ڈائریکٹوریٹ آف پٹرولیم کنسیشنز سے 23 مختلف منظوریاں درکار ہیں۔ملک میں اب زیادہ بڑے گیس ذخائر ملنے کے امکانات نہیں۔ انہوں نے کہاکہ ملک سے زیادہ تر ملٹی نیشنل کمپنیاں جا چکی ہیں۔ بلوچستان کے بلاک 28 میں گیس کے بڑے ذخائر ملنے کے امکانات ہیں سیکریٹری پٹرولیم نے کہاکہ ایران نے اپران پاکستان گیس پائپ لائن مکمل نہ کرنے پر پاکستان کو نوٹس دیا ہے،پاکستان کا موقف ہے کہ پائپ لائن مکمل کرنا ہمارے لیے ممکن نہیں۔

پٹرولیم،بریفنگ

مزید : صفحہ آخر