پٹواریوں کی ملی بھگت،اربوں روپے کی سرکاری اراضی لینڈ مافیا کے چنگل میں

پٹواریوں کی ملی بھگت،اربوں روپے کی سرکاری اراضی لینڈ مافیا کے چنگل میں

لاہور(اپنے نمائندے سے) تحصیل شالیمار کے پٹوار سرکل ہربنس پورہ میں پانچ سالوں کے دوران خود ساختہ، جعلی ٹی او، پی ٹی ڈی اور الاٹمنٹ لیٹر پر پٹواریوں نے وفاقی حکومت کی اربوں روپے مالیت کی اراضی لینڈ مافیا میں بانٹ دی۔ پٹوار سرکل ہربنس پورہ میں پانچ سالوں میں تعینات ہونے والے پٹواریوں نے جعلی ٹی او کا ریکارڈ مرتب کروایا، جعلی تصدیق کروائی اور ریونیو ریکارڈ میں انتقالات کی تصدیق کرواتے ہوئے غیر مالکان کو انتہائی قیمتی جائیداوں کا مالک بنا دیا۔ڈی جی نیب، ڈی جی اینٹی کرپشن اور سینئر ممبر بورڈ آف ریونیوریکارڈ کی بستہ پڑتال کروائیں تو بڑے پیمانے پر ھونے والی بے ضابطگیاں عیاں ہو جائیں گی۔دوسری طرفہ ہربنس پورہ میں حکومت کی ایک کنال15 مرلہ کی اراضی کو جعلسازی سے بیچنے والے لینڈ مافیا کوتفتیشی نے بے گنا ہ ظاہر کر دیا.۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ ایک کنال 15 مرلہ کی یہ سرکاری اراضی تھانہ کیلئے وقف کیے جانا تھی جس کی سمری بھی چیف سیکرٹری پنجاب کو بھجوادی گئی ہے۔ محکمہ ریونیو کے اعلیٰ افسران کا کہنا ہے کہ ڈی آئی جی لاہور کو اس معاملہ کا سختی سے نوٹس لینا چاہیے یہاں پر سرکاری محکموں کی اپنی جائیداد غیر محفوظ ہو چکی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4