لاہور ایئر پورٹ پر دو افراد کا قتل، اسلحہ کیسے اندر گیا اور پکڑے جانے والے کون ہیں ؟ پوری کہانی سامنے آ گئی

لاہور ایئر پورٹ پر دو افراد کا قتل، اسلحہ کیسے اندر گیا اور پکڑے جانے والے ...
لاہور ایئر پورٹ پر دو افراد کا قتل، اسلحہ کیسے اندر گیا اور پکڑے جانے والے کون ہیں ؟ پوری کہانی سامنے آ گئی

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور ایئر پورٹ میں فائرنگ کرنے والے ملزموں نے تحقیقاتی اداروں کو بیان قلمبندکرادیا۔نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق ملزمان کا کہنا ہے کہ ملزمان کوقیصربٹ نے حملے کیلئے بھیجا ،قیصربٹ پیپلزپارٹی کے مقتول رہنمابابربٹ کابھائی ہے ،ان کا کہنا ہے کہ قیصربٹ نے ہمیں زین کوقتل کرنے کیلئے بھیجا،جبکہ نجی ٹی وی ایکسپریس نیوزنے پولیس ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ ملزم ارشد اورشان کے مطابق فیملی کے ساتھ ایئر پورٹ داخل ہوئے،ملزمان کاکہناہے کہ وہ قتل کی دو سال سے منصوبہ بندی کررہے تھے،مقتولین کی سکیورٹی سخت اور گارڈ ہوتے تھے جس کی وجہ سے انہیں مارنا مشکل ہوتا تھا،ملزمان نے کہا کہ قتل کیلئے ایئر پورٹ کو آسان ٹارگٹ سمجھا،مقتولین کی کنفرمیشن کے بعد انہیں فائرنگ کرکے مارا،ان کا کہناتھا کہ ہمارے پاس کوئی دوسرااسلحہ یاساتھی نہیں ۔انہوں نے کہا کہ اسلحہ ساتھ آنے والی خواتین کو پکڑا دیا تھا،خواتین کی چیکنگ نہیں ہوئی اندرجاکر اسلحہ لے لیا،ایئر پورٹ پر خاتون سکیورٹی اہلکار نہ ہونے کا فائدہ اٹھایا۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور