اپوزیشن کوچورکہنے والوں کی اپنی پارٹی چور نکلی، خواجہ سعد رفیق

      اپوزیشن کوچورکہنے والوں کی اپنی پارٹی چور نکلی، خواجہ سعد رفیق

  

لاہور(نامہ نگار)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ عمران خان کے جانے کے بعد کیا صورتحال ہوگی یہ سوچنا ہوگا،ایسی صورتحال میں کوئی بھی حکومت نہیں لے گا،یہ لوگ سارے اپوزیشن چور کہتے تھے، آج ان کی اپنی پارٹی سے چور نکل رہے ہیں،ان خیالات کا اظہارانہوں نے احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، خواجہ سعد رفیق نے مزید کہا کہ حکومت کوچاہیے اپنی ناکامی کو سب کے سامنے قبول کرے،انہوں نے مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ بھارت کے ظلم بڑھ رہے ہیں ہیں، ہم کشمیریوں کا مقدمہ لڑنے کی وجہ آپس میں لڑ رہے ہیں، یہ آپس کی لڑائی پاکستان کو کہاں لے کر جائے گی، مائنس ون کہاں سے آتا ہے کون لے کر آتا ہے کچھ پتہ نہیں، میں سیاسی جماعت کا کارکن ہوں اور سیاسی جماعتوں کو مضبوط دیکھنا چاہتا ہوں،خواہ میری اپنی جماعت میں بھی ایسی آواز آتی تھی تو بھی اس کی مخالفت کی،میں کسی بھی سیاسی جماعت کے ٹوٹنے کے حق میں نہیں ہوں،انہوں نے کہا کہ ہمارا یہاں کوئی کام نہیں پھر بھی ہم یہاں آکر پیشیاں بھگت رہے ہیں، حکومت کی سازش ہے کہ مخالفین کو پھنسائے رکھے،مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے انہوں نے مزیدکہا کہ کشمیر میں بھارتی فورسز ز نہتے کشمیریوں کا قتل عام کر رہے ہیں،ایک بچے کی تصویر پوری دنیا میں وائرل ہو چکی ہے،بے دردی کے ساتھ کشمیریوں کا قتل عام کیا جارہا ہے ہے،کشمیری پاکستان کے نام پر پر جان قربان کر رہے ہیں اور ہم خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں،کشمیر سے اظہار یکجہتی کے لئے ہر جمعہ کو آدھا گھنٹہ احتجاج کرنے کا اعلان کیا گیاتھا، آج کہاں گئے وہ احتجاج وہ بات آئی چلائی ہوگئی ہے،خواجہ آصف آصف برجیس طاہر،میاں شہباز شریف اور جاوید لطیف کو پھانسنے کی کوشش کی جارہی ہے،انہوں نے کہا کہ فاضل عدالت کا بھی وقت ضائع کیا جا رہا ہے ہے اور ہمیں بھی خوار کیا جارہا ہے۔

خواجہ سعد رفیق

مزید :

صفحہ آخر -