ن لیگ کا لاہور سے ”گو عمران گو“ تحریک کاآغاز، 14احتجاجی کیمپ

      ن لیگ کا لاہور سے ”گو عمران گو“ تحریک کاآغاز، 14احتجاجی کیمپ

  

لاہور(سیاسی رپورٹر) مسلم لیگ ن لاہور کے زیر اہتمام شہر بھر میں مہنگائی کے خلاف درجنوں احتجاجی کیمپ لگائے گئے، مہنگائی کے ستائے عوام سڑکوں پر نکل آئے، کیمپوں سے سابق سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق، خواجہ عمران نذیر اور رانا مشہود سمیت دیگر ارکان قومی و صوبائی اسمبلی نے دھواں دار خطاب کئے، شرکاء حکومت کے خلاف آٹا چور، چینی چور،دوائیاں چور اور پٹرول چور،گو عمران گو، مک گیا تیرا شو عمران گو عمران گو کے نعرے لگاتے رہے۔ گزشتہ روزپہلا کیمپ شاہدرہ چوک میں لگایا گیا جس کی قیادت رکن قومی اسمبلی ملک محمد ریاض، رکن پنجاب اسمبلی سمیع اللہ خان نے کی۔ دوسرا کیمپ بادامی باغ میں لگایا گیا جس کی قیادت رکن پنجاب اسمبلی غزالی سلیم بٹ نے کی۔ اس موقع پر سابق ڈپٹی میئر مشتاق مغل،میاں رشید سمیت دیگر بھی موجود تھے۔تیسرا کیمپ کوپر سٹور جی ٹی روڈ پر لگایا گیاجس کی قیادت رکن پنجاب اسمبلی میاں مجتبیٰ شجاع نے کی جبکہ عامر خان، صبغت اللہ سلطان،سہیل بٹ،ایم حبیب،مون بٹ،ارشد،فیض،اینڈ ریو جوزف،روزینہ طاہر سمیت دیگر نے شرکت کی۔چوتھا کیمپ شالامار چوک میں لگایا جس کی قیادت ارکان اسمبلی علی پرویز ملک،خواجہ عمران نذیر اور چوہدری شہباز نے کی۔ پانچواں کیمپ داروغے والا چوک میں لگایا جس کی قیادت ارکان اسمبلی شیخ روحیل اصغر، باؤ اختر نے کی۔چھٹا کیمپ جوڑا پل میں لگایا گیا جس کی قیادت سابق سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق،خواجہ سلمان رفیق،ملک وحید،اور احسن شرافت نے کی۔ ساتواں کیمپ سمن آباد چوک میں لگایا گیا جس کی قیادت مہر اشتیاق، رانا مشہود اور میاں باقر نے کی۔آٹھواں کیمپ ٹھوکر نیاز بیگ لگایاگیا جس کی قیادت سیف الملوک کھوکھر نے کی۔ نواں کیمپ بنک سٹاپ فیروز پور روڈ پر لگایاگیا جس کی قیادت رکن قومی اسمبلی رانا مبشر اختر بادشاہ چوہدری عبدالمجید چن نے کی۔ دسواں کیمپ اچھرہ میں لگایا گیا جس کی قیاد ت خواجہ حسان اور سید توصیف شاہ نے کی۔گیارواں کیمپ ٹاؤن شپ میں لگایا گیا جس کی قیادت پرویز ملک،شائستہ پرویز ملک رکن اسمبلی رمضان صدیق بھٹی، اور میاں سلیم نے کی۔ بارہواں کیمپ والٹن روڈ پر لگایا گیا جس کی قیادت رکن میاں نصیر اور یاسین سوہل نے کی۔تیرہواں کیمپ رائیونڈ میں لگایا گیا جس کی قیادت رکن قومی اسمبلی افضل کھوکھر مرزا جاوید اور کرنل طارق نے کی۔چوہدواں کیمپ مزنگ میں لگایا گیا جس کی قیادت ارکان اسمبلی میاں وحید عالم، میاں مرغوب احمد اور بلال یاسین نے کی۔کیمپوں میں ن لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ اپنے خطاب میں خواجہ عمران نذیر نے کہا کہ عمران نیازی آپ نااہل ہیں ہم آپ سے استعفے کا مطالبہ کرتے ہیں اب آپ اس قوم کی جان چھووڑ دوآپ نے پچھلے دوسالوں میں عوام کو جھوٹ کی کہانیاں سنائیں ٹرک کی بتی کے پیچھے لگائے رکھا۔مسلم لیگ ن اب اس ملک کے ساتھ مزیدکھلواڑ نہیں ہونے دیگی،عوام کے دکھوں کا مداوہ کریگی۔ 50لاکھ گھر اور ایک کروڑ نوکریا دینے کا دعویٰ کرنے والوں نے پہلے والے گھر اور نوکریاں بھی چھین لی ہیں۔ لوگ سلیکٹڈ نیازی اور اس کی نالائق ٹیم کو ہاتھ اٹھا اٹھا کربد دعائیں دے رہے ہیں۔رانا مشہود نے کہا کہ نالائق حکومت نے ملکی معیشت کا جنازہ نکال دیا ہے۔آٹا، چینی اور پیڑول سکینڈل کے مجروں کو کٹہرے لر کر چھوڑیں گے۔مائنس ون کسی اپوزیشن جماعت نے نہیں کہا بلکہ عمران خان نے مائنس ون کی تصدیق خود کر دی ہے۔ مائنس ون کا ایشو پٹرول مافیا، آٹا اور چینی مافیا سے توجہ ہٹا نے کے لئے چھیڑا گیا ہے لیکن عوام اب ان آٹا،چینی، پٹرول اور میڈیسن چوروں کو ان کے انجام تک پہنچا کر ہی دم لیں گے۔

احتجاجی کیمپ

اسلام آباد (مانٹیرنگ ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے دعویٰ کیا ہے کہ‘’فرینڈز آف خان”کی رخصتی قریب، یہ ملکی تاریخ کی کرپٹ ترین حکومت ہے، مائنس ون نہیں بلکہ مائنس پی ٹی آئی ہونے والا ہے۔پارلیمنٹ لاجز میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اپنی انا کی وجہ سے پاکستان کی بدنامی کر رہے ہیں۔ اپوزیشن نہیں بلکہ حکمران خود کو اپنے کارناموں کی وجہ سے مائنس کر رہے ہیں۔ ہوائی قسم کے حکمرانوں نے تباہی کی، اب ان کے جانے کا وقت آ گیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ حکومتی کارکردگی نے ہر ادارے پر سوال کھڑا کر دیا ہے۔ طیارہ حادثے کی وجہ سے پوری دنیا میں پاکستان کی جگ ہنسائی ہوئی۔ کیا یہ حکمران پاکستان کے دوست ہیں؟انہوں نے الزام عائد کیا کہ گلگت بلتستان میں افسران کو سیاسی رشوتیں دی جا رہی ہیں۔ دھاندلی کی اجازت نہیں دیں گے۔ شفاف الیکشن کروائے جائیں، ہم کسی قسم کا تنازع افورڈ نہیں کر سکتے۔مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ روز پیش آنے والے دلخراش واقعے پر بات کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ تین سالہ بچے کے سامنے اس کے نانا کو بھارتی فوج نے شہید کیا۔ اس تصویر نے پوری دنیا کو ہلا کے رکھ دیا ہے۔لیگی رہنما نے حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں لاک ڈاؤن کو ایک سال پورا ہونے کو ہے لیکن ہماری حکومت تقریروں کے علاوہ کچھ نہیں کر سکی۔ کشمیر میں ہر روز ننھے بچوں کے سامنے ان کے والدین کو شہید کیا جا رہا ہے لیکن ہماری حکومت نے ایک سال ضائع کردیا۔ میں مطالبہ کرتا ہوں کہ کشمیر کے معاملے پر قومی اسمبلی کا اجلاس بلایا جائے۔ان کا کہنا تھا کہ اس موقع پر وزیراعظم کو امریکی، برطانوی صدور اور تمام سلامتی کونسل کے ارکان کو فون کرکے اس تصویر پر بات کرنی چاہیے تھی۔ کشمیر پر قوم وزیراعظم کا گناہ معاف نہیں کرے گی۔اس موقع پر بات کرتے ہوئے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ووٹ ضمیر کی آواز ہوتی ہے۔ اگر کسی نے اپنا ضمیر بیچا تو اللہ کے سامنے جوابدہ ہوگا۔پی آئی اے کی بیرون ممالک فلائٹس کی پابندی پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ لائسنس حکومت نہیں بلکہ سول ایوی ایشن جاری کرتی ہے۔ یہ 262 پائلٹس کے روزگار اور پاکستان کی عزت کا مسئلہ ہے۔ پرسوں ذاتی حیثیت میں پائلٹ کے مسئلے پرپریس کانفرنس میں حقائق پیش کرونگا۔چینی سکینڈل کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ پرانے ٹینڈر پر جا کر 8 ہزار 300 روپے فی ٹن کے حساب سے زیادہ پیسے دے کر چینی لی گئی۔ سپریم کورٹ اس کا سوموٹو نوٹس لے، ہم بھی پٹیشن فائل کریں گے۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ حکومت کے کرپشن کے اتنے باب ہیں کہ ختم ہی نہیں ہونگے۔ اکیس مہینے سے پاکستان میں چینی کا مسئلہ چل رہا ہے۔ چینی پچاسی روپے میں بک رہی ہے اور حکومت کو پرواہ نہیں، کمیشن کا کام تھا یہ دیکھنا کہ چینی کیوں مہنگی ہوئی؟ وہ کمیشن نے نہیں کیا۔ان کا کہنا تھا کہ یہ پاکستانی تاریخ کی سب سے کرپٹ حکومت ہے۔ یوٹیلٹی سٹورز میں عمران خان نے دیگر محکموں کی طرح اپنے دوستوں کو لگایا ہوا ہے۔ یہ حکومت جائیگی تو پتا چلے گا کہ کس قماش کے لوگ بیٹھے تھے۔

ن لیگ

مزید :

صفحہ اول -