عالمی برادری نے نوٹس نہ لیا تو جنوبی ایشیا کا امن تہہ و بالا ہو جائیگا: اسد مجید

  عالمی برادری نے نوٹس نہ لیا تو جنوبی ایشیا کا امن تہہ و بالا ہو جائیگا: اسد ...

  

واشنگٹن(اظہر زمان،بیوروچیف) بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں کورونا وباء کی آڑ میں وہاں ڈبل لاک ڈاؤن کرکے نہتے کشمیریوں پر ظلم و ستم کی انتہا کردی ہے۔ اس کے علاوہ حال ہی میں مودی حکومت نے ایک نیا آرڈیننس جاری کرکے مقبوضہ کشمیر میں آبادی کے تناسب میں ر دو بدل کرنے کی کوششوں کا آغاز کردیا ہے جو سلا متی کونسل اوربین الاقوامی قوانین کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔ مقبوضہ وادی کی تشویشناک صورتحال کا یہ جائزہ یہاں پاکستانی سفیر ڈاکٹر اسد مجید خان نے امریکی اخبار واشنگٹن ڈپلومیٹ کے زیر اہتمام ایک آن لائن سیمینار کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر کے حالات کے علاوہ پاکستان کی صورتحال اور امریکہ کیساتھ تعلقا ت پر بھی تبصرہ کیا۔ ڈاکٹر اسد مجید خان ے مزید بتایا کہ بھارتی سرکار نے اسی لاکھ نہتے کشمیریوں کو 5اگست 2019ء سے محصور کر رکھا ہے تاکہ ان کی حق خودارادیت کی جدوجہد کو دبایاجا سکے۔ انہوں نے بتایا کہ بھارتی افواج مقبوضہ کشمیرمیں پیلٹ گولیاں برسا رہی ہیں اوراس کے علاوہ وہاں غیر قانونی سرگرمیوں کا بھی سلسلہ جاری ہے۔ پاکستانی سفیرنے خبر دار کاکیا کہ اگر بین الاقوامی برادری نے مقبوضہ کشمیر میں تیزی سے بگڑتی ہوئی صورتحال کا نوٹس نہ لیا تو جنوبی ایشیاء میں امن اور سکیورٹی تہ و بالا ہو جائے گی۔ انہوں نے عالمی برداری پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے ظلم وستم کیخلاف آواز بلند کریں۔ پاکستانی سفیر نے شرکاء کو حکومت پاکستان کے کورونا وائرس کی وباء سے نمٹنے کیلئے اٹھائے جانیوالے اقدامات سے بھی آگاہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان نے سمارٹ لاک ڈاؤن متعارف کروایا ہے تاکہ بڑھتے ہوئے کیسز پر تیزی سے قابو پایا جا سکے۔ اس کے علاوہ ”احساس“ پروگرام کے تحت انتہائی کم آمدن والے طبقے کو کیش ادائیگیاں کی ہیں تاکہ وہ اس وباء کا احسن طریقے سے مقابلہ کر سکے۔

اسد مجید

مزید :

صفحہ اول -