حکومت قبائلی عوام کی مراعات بحال کرے،ملک آیاز

حکومت قبائلی عوام کی مراعات بحال کرے،ملک آیاز

  

مہمند(نمائندہ پاکستان)حکومت قبائلی عوام کے مراعات کوبحال رکھیں۔ ملک کی خاطر قبائلی عوام کی قربانیاں قابل تعریف ہے۔ ہم حکومت کے خلاف کسی بھی احتجاج کاحصہ نہیں بنیں گے۔ ہر صورت میں حکومت کا ساتھ دینگے۔ حکومت کے جانب سے پولیس اور عدالتی نظام کا فیصلہ قبائلی عوام کیلئے درست اقدام ہے۔ ملک آیاز خان و دیگر کا پریس کانفرنس۔تفصیلات کے مطابق مہمندپریس کلب میں انضمام کے حق میں ملک آیاز خان کے سربراہی میں ملک درے خان،ملک ہمیش،ملک گل حبیب،ملک موسم خان،ملک آمیر دوست خان، ملک سعید احمد، ملک زمین خان، اور ملک عثمان جان، وغیرہ نے پریس کانفرنس کے دوران اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قبائلی عوام نے ملک کی خاطر بے پناہ قربانیاں دی ہیں۔ اور کسی لالچ کے بغیر جانی ومالی قربانیوں کے نذرانے پیش کی ہیں ۔ اب چونکہ حکومت نے ان قبائلی اضلاع کو صوبہ خیبر پختونخوا میں ضم کرکے ایک اچھا فیصلہ کیا ہے۔جبکہ پولیس اور عدالتی نظام سے علاقے میں امن وامان قائم ہواہے۔ لیکن جو سپیشل خاصہ دار اور مراعات قبائلی عوام و مشران کو دی گئے ہیں۔ ہم حکومت سے ہمدردانہ درخواست کرتے ہیں، کہ ان کو بحال رکھیں۔ تا کہ قبائلی علاقوں کے عوام مزید متاثر نہ ہوسکے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم حکومت کے ہر فیصلے کی پابندی کرینگے۔ مشران نے کہا کہ ہم ہر صورت میں حکومت کا ساتھ دینگے۔اور شروع سے حکومت اور قانون کا پاسداری کی ہے۔ اور آئندہ بھی ہر قسم تعاون کیلئے تیار ہے۔ لیکن قبائل گزشتہ حالات کی وجہ سے بہت متاثر ہوئے ہیں۔ حکومت قبائلی عوام کے ساتھ نرمی کریں۔ پریس کانفرنس کے دوران قومی مشران نے کہاکہ پولیس اور عدالتوں کے خلاف وہ قانون شکن لوگ ہیں۔ جو غلط کام کرتے ہے لیکن قبائلی مشران ملک کی خاطر خدمت کرتے ہیں اور کرتے رہینگے۔مشران کا کہنا تھا کہ گزشتہ دنوں مُٹھی بھر مشران نے احتجاج کی دھمکی دی ہیں لیکن ہم کسی بھی انضمام مخالف احتجاج کا حصہ نہیں بنے ینگے۔اور ہر حالت میں حکومت کا ساتھ دینگے انہوں نے اعلان کیاکہ انضمام کے حق میں 10 جولائی کو غلنئی جرگہ ہال میں ایک گرینڈ جرگہ بھی منعقد کیا جائے گا،جس میں اہم فیصلہ کرینگے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -