دو میچوں کی کارکردگی کو بنیاد بنا کر ٹیم سے ڈراپ کر دیا گیا،جنید

دو میچوں کی کارکردگی کو بنیاد بنا کر ٹیم سے ڈراپ کر دیا گیا،جنید

  

لاہور (سپورٹس رپورٹر) ٹیسٹ فاسٹ باؤلر جنید خان کا کہنا ہے کہ 2019ء عالمی کپ کے لیے منتخب ہونے کے بعد ڈراپ کیا گیا تو ریٹائرمنٹ کا فیصلہ کیا تھا۔آٹھ سال تک اس وقت کا انتظار کیا تھا لیکن صرف دو میچوں کی کارکردگی کو بنیاد بنا کر ٹیم سے ڈراپ کر دیا گیا حالانکہ میرا اکانومی ریٹ دیگر گیند بازوں سے بہتر تھا۔ اس فیصلے سے بہت دکھ پہنچا تھا منہ پر ٹیپ لگا کر فوٹو ٹویٹ کی لیکن بعد میں ہٹا دی تھی کیونکہ تصویر کے لگے رہنے سے پاکستان کی ساکھ کو نقصان پہنچتا۔ آٹھ سال بعد موقع ملے اور اچانک ڈراپ ہو جاؤں تو کیا کر سکتا تھا۔ یہ تصویر خود ہٹائی تھی کرکٹ بورڈ میں سے کسی نے نہیں کہا تھا۔میرا کیرئیر نہایت صاف شفاف ہے،والد نے ہمیشہ یہی کہا کہ کوئی ایسا کام نہیں کرنا جس سے ملک کی عزت خراب ہو۔دورہ انگلینڈ کے لیے بھی منتخب نہیں کیا گیا افسوس تو ہوا ہے کیونکہ وہاں تجربہ رکھنے والے کھلاڑیوں کو فائدہ ہوتا ہے۔میرا خیال تھا کہ موقع ملے گا لیکن ایسا نہیں ہو سکا۔ میں تیاری کر رہا تھا، فٹنس پر بھی کام کر رہا تھا اور ٹریننگ بھی جاری تھی لیکن موقع نہیں مل سکا لیکن اسکا یہ مطلب نہیں کہ گھر بیٹھ جاؤں محنت کا سلسلہ جاری رکھونگا۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -