عدم پیشی پر قیصرا مین بٹ کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

عدم پیشی پر قیصرا مین بٹ کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

  

 لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے پیراگون سکینڈل کیس میں ملوث خواجہ برادران کے کیس کی سماعت8 جولائی تک ملتوی کرتے ہوئے چیئرمین نیب کو شوکاز نوٹس جاری کردیا ہے،فاضل جج نے وعدہ معاف گواہ قیصر امین بٹ کوعدالت میں پیش نہ کرنے پراس کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے سی سی پی او لاہور کو حکم دیاہے کہ انہیں آئندہ سماعت پر عدالت میں پیش کیاجائے۔کیس کی سماعت شروع ہوئی تو فاضل جج نے استفسار کیا کہ وعدہ معاف گواہ قیصر امین بٹ کیوں پیش نہیں ہوا؟نیب کے پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ قیصر امین بٹ کو سمن جاری نہیں کئے گئے، نیب کے پراسیکیوٹر کے اس جواب پر فاضل جج نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ کیسے کہہ سکتے ہیں کہ سمن نہیں کیاگیا؟ آپ عدالت کا راستہ روک رہے ہیں، عدالت یہ برداشت نہیں کرے گی، فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ اب میں ڈی جی رینجرز کی ڈیوٹی لگا دیتا ہوں کہ گواہ کو پیش کریں، دوران سماعت عدالت نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی ایم پی اے خواجہ سلمان رفیق کو حاضری لگانے کے بعد عدالت سے جانے کے اجازت دے دی،خواجہ برادران کے خلاف فرد جرم عائد کی جا چکی ہے،نیب کی جانب سے اس کیس میں 130 گواہان کو پیش کیا جائے گا،نیب کی جانب سے خواجہ برادران پر پیرا گون سٹی کرپشن میں مبینہ طور پر مالی فوائد حاصل کرنے کا الزام ہے، نیب کا موقف ہے کہ خواجہ برادران اور ندیم ضیاء نے 4 ارب روپے کی 800 مرلہ اراضی فروخت کی، یادرہے کہ خواجہ برادران کی اس کیس میں 17 مارچ 2020 ء کو سپریم کورٹ نے ضمانت منظور کی تھی۔

مزید :

علاقائی -