جون میں 315افراد ٹریفک حادثات، 116ڈوب کر جاں بحق ہوئے: پنجاب ایمرجنسی سروس

جون میں 315افراد ٹریفک حادثات، 116ڈوب کر جاں بحق ہوئے: پنجاب ایمرجنسی سروس

  

لاہور(کرائم رپورٹر) گزشتہ ماہ پنجاب بھر ٹریفک حادثات اور ڈوبنے کی ایمرجنسیز میں 431 افرادجاں بحق ہوئے جن میں 315افراد کی اموات روڈ ٹریفک حادثات میں ہوئی جبکہ 116افراد ڈوبنے سے زندگی کی بازی ہار گئے۔ ایمرجنسی اعدادوشمار کے مطابق ریسکیوسروس نے 21935ٹریفک حادثات، 33586 میڈیکل ایمرجنسیز، 1372 آتشزدگی کے واقعات، 2789 جرائم، 232 ڈوبنے کے واقعات، 69 عمارتیں گرنے، 15سلنڈر پھٹنے، 7800 متفرق ایمرجنسیزپر رسپانڈ کیا۔ ایمرجنسی اعدادوشمار سے پتہ چلتا ہے کہ آتشزدگی کے بیشتر واقعات بڑے شہروں میں رونما ہوئے جن میں لاہور میں 311، فیصل آباد میں 157،ملتان میں 103، راولپنڈی میں 76،گوجرانوالہ میں 68، سیالکوٹ میں 42،بہاولپور میں 53،سرگودھا میں 33،رحیم یارخان میں 29،اوراوکاڑہ میں 29 آگ لگنے کے واقعات پیش آئے۔ اسی طرح لاہور میں 4243، فیصل آباد میں 2043، ملتان میں 1880، گوجرانوالہ میں 1208، ساہیوال میں 698،بہاولپور میں 844 اور راولپنڈی میں 737،ٹریفک حادثات پیش آئے۔

 اجلاس کے شرکاء سے خطاب کر تے ہوئے ڈاکٹر ڑضوان نصیر نے روڈ ٹریفک حادثات اور ڈوبنے کی ایمرجنسیزمیں 431قیمتی انسانی جانوں کے ضیائع پر تشویش کا اظہارکیا۔ انہوں نے کہا کہ روڈ سیفٹی کے ضروری اقدامات اورروڈ سیفٹی قوانین پر عمل پیرا ہو کر روڈ ٹریفک حادثات کو بڑی حد تک کم کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے والدین سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے بچوں کو ندی نالوں، نہروں، دریاؤں اور دیگر نہانے کی ممکنا خطرناک مقامات پر جانے کی اجازت ہرگز نہ دیں تاکہ انہیں ڈوبنے کے حادثات سے محفوظ رکھا جا سکے۔۔ انہوں نے نے تمام ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسرز اور بالخصوص جنوبی پنجاب کے ضلعی آفیسر ز کو ممکنہ سیلاب کیصورتحال سے نمٹنے کیلئے انتظامات اور تیاریوں کو یقینی بنایا جائے۔ ڈی جی ریسکیو نے اس پر بات پر زور دیا کہ ریسکیورز کی فزیکل فٹنس اور سیلاب کی ہنگامی صورتحال سے نمٹے کے لئے متعلقہ سامان کی بحالی ہماری اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے شہریوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی ہنگامی صورتحال میں صرف بروقت 1122 پرکال ہی سے بروقت ریسپانس کی ضامن ہے اور کسی بھی ہنگامی حالات میں ممکنہ نقصان کو کم سے کم کیا جا سکتا ہے۔

مزید :

علاقائی -