صارفین کے فونز پر چپکے سے کورونا وائرس ٹریکر انسٹال کردیا گیا؟ لوگ حیران پریشان رہ گئے

صارفین کے فونز پر چپکے سے کورونا وائرس ٹریکر انسٹال کردیا گیا؟ لوگ حیران ...
صارفین کے فونز پر چپکے سے کورونا وائرس ٹریکر انسٹال کردیا گیا؟ لوگ حیران پریشان رہ گئے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس کے انسداد کے لیے ایپل اور گوگل نے لوگوں کے سمارٹ فونز میں خفیہ طور پر ایک نیا فیچر انسٹال کر دیا ہے جس کا مقصد لوگوں کو کورونا وائرس سے متعلق آگاہ کرنا اور اس موذی وباءکے خاتمے میں اپنا حصہ ڈالنا ہے لیکن جس خفیہ طریقے سے اسے فونز میں انسٹال کیا گیا ہے اس پر بیشتر صارفین برانگیختہ ہو گئے ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق اس نئے فنکشن کا نام ’کووِڈ 19ایکسپوژر لاگنگ‘ (COVID-19 Exposure Logging)ہے، جو فونز میں انسٹال تو صارفین کی مرضی کے بغیر خفیہ طریقے سے کیا گیا ہے تاہم صارفین کو اسے آن یا آف کرنے کا کنٹرول دیا گیا ہے۔

یہ فیچر آئی او ایس اور اینڈرائیڈ دونوں طرح کے فونز میں انسٹال کیا گیا ہے تاہم یہ صرف انہی ممالک کے صارفین کے فونز میں انسٹال کیا گیا ہے جن ممالک میں کورونا وائرس کے انسداد کے لیے کوئی مخصوص ایپلی کیشن نہیں بنائی گئی۔ ان ممالک میں امریکہ اور برطانیہ بھی شامل ہیں۔ رپورٹ کے مطابق یہ فیچرز ٹریسنگ ایپلی کیشنز کے ساتھ مل کر کام کرے گا جو صارفین ایپ سٹورز سے ڈاﺅن لوڈ کر سکتے ہیں۔ جب صارفین ایسی کوئی ایپلی کیشن اپنے فون میں انسٹال کرکے اس فیچر کو آن کریں گے تو جب بھی صارف کسی ایسی جگہ پر ہو گا جہاں اس کو کورونا وائرس لاحق ہونے کا خطرہ ہو، وہاں یہ فیچرز صارف کو نوٹیفکیشن کے ذریعے الرٹ کر دے گا۔ یہ فیچر اینڈآئی فونز کی سیٹنگزمیں پرائیویسی کے آپشن میں ہے۔ پرائیویسی میں جب آپ ہیلتھ سیکشن میں جائیں گے تو آپ کو یہ فیچر نظر آ جائے گا۔ اینڈرائیڈ فونز میں اینڈرائیڈ سیٹنگز میں گوگل کے سیکشن میں ڈالا گیا ہے۔صارفین کا کہنا ہے کہ یہ فیچرز ایک طرف فون کی بیٹری بہت جلد ختم ہونے کا سبب بن رہا ہے تو دوسری طرف اس سے فونز کی کارکردگی بھی بہت گر گئی ہے۔ واضح رہے کہ یہ نیا فیچرز آئی او ایس اور اینڈرائیڈ میں 20مئی کے روز ایک سافٹ ویئر اپ ڈیٹ کے ذریعے انسٹال کیا گیا ہے۔ جن لوگوں نے 20مئی یا اس کے بعد سافٹ ویئر اپ ڈیٹ کیا ہے صرف انہی کے فونز میں یہ فیچر موجود ہوگا۔

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -کورونا وائرس -