کیا ورلڈکپ 2011 ءکا فائنل میچ فکسڈ تھا؟ تحقیق کاروں نے فیصلہ سنا دیا

کیا ورلڈکپ 2011 ءکا فائنل میچ فکسڈ تھا؟ تحقیق کاروں نے فیصلہ سنا دیا
کیا ورلڈکپ 2011 ءکا فائنل میچ فکسڈ تھا؟ تحقیق کاروں نے فیصلہ سنا دیا

  

کولمبو (ڈیلی پاکستان آن لائن) سری لنکن پولیس نے سابق کپتان سنگاکارا سمیت دیگر سابقہ کھلاڑیوں سے پوچھ گچھ کے بعد تمام کھلاڑیوں کو شک سے بری قرار دے کر اپنا فیصلہ سنا دیا ہے کہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) ورلڈکپ 2011ءکا فائنل میچ فکس نہیں تھا۔

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی ورلڈکپ 2011ءکے فائنل میچ فکس ہونے سے متعلق اچانک شروع ہونے والی تحقیقات اچانک ختم بھی کر دی گئی ہیں۔ سپیشل پولیس چیف نے کہا کھلاڑیوں کے بیانات درست ہیں، میچ فکسنگ کے ثبوت کوئی نہیں ہیں،تحقیقات سے ملک میں بحرانی کیفیت تھی تاہم اب سب کلیئر قرار دے کررپورٹ حکومت کو بھیج دی گئی ہے۔

واضح رہے کہ سری لنکا کے سابق سپورٹس منسٹر الوتھ گاما گے نے چودہ الزامات لگائے تھے مگر ثبوت کوئی نہیں دیا، پولیس نے ڈی سلوا، تھرنگا اورسنگاکارا کے انٹرویو ریکارڈ کئے تاہم سابق سپورٹس منسٹر الزامات پر کوئی ثبوت پیش نہ کر سکے جس پر تمام کھلاڑیوں کو شک سے بری قرار دے دیا گیا۔

دوسری جانب کرکٹ کے نگراں عالمی ادارے آئی سی سی نے بھی کلین چٹ دیتے ہوئے کہا ہے کہ فی الحال فکسنگ کے کوئی ثبوت یا شواہد انہیں نہیں ملے، کوئی ایسے ٹھوس دلیل یا مواد موجود نہیں جس سے فکسنگ کے الزامات سچ ثابت ہوں۔

مزید :

کھیل -