وزیر ہوابازی نے کریڈٹ لینے اور سابقہ حکومتوں کو نیچا دکھانے کے لئے۔۔۔۔۔سینیٹر مشتاق احمد خان پھٹ پڑے،غلام سرور خان پر سنگین الزام لگا دیا

وزیر ہوابازی نے کریڈٹ لینے اور سابقہ حکومتوں کو نیچا دکھانے کے ...
وزیر ہوابازی نے کریڈٹ لینے اور سابقہ حکومتوں کو نیچا دکھانے کے لئے۔۔۔۔۔سینیٹر مشتاق احمد خان پھٹ پڑے،غلام سرور خان پر سنگین الزام لگا دیا

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ وفاقی وزیر ہوا بازی نے ایک متنازعہ بیان دے کر پی آئی اے کے تابوت میں آخری کیل ٹھونک دی ہے،وزیر ہوابازی نے کریڈٹ لینے اور سابقہ حکومتوں کو نیچا دکھانے کے لئے قومی ادارے اور پائلٹوں کا مستقبل داؤ پر لگادیا،جس ادارے نے دنیا کے کئی نامور فضائی اداروں کو کھڑا کیا عقل سے عاری حکمرانوں نے اس ادارے کو گرادیا،یہ سرمایہ دار مافیا کی قومی ائیر لائن کے خلاف گہری سازش ہے جو دنیا بھر میں پی آئی اے کے بڑے بڑے ہوٹلز اور اثاثے ہتھیانے کے لئے سرگرم ہوگئے ہیں، پائلٹوں کے لائسنس جعلی تھے تو ان کی تحقیقات کی جائیں اور ملوث افراد کو کڑی سی کڑی سزا دی جائے۔

المرکز الاسلامی پشاور میں صوبائی ذمہ داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ اندرون و بیرون ملک پی آئی اے کی پراپرٹی ہتھیانےاورقومی ائرلائن کوپرائیویٹائزکرنےکےلیےادارے کو بدنام کیا گیا جس کی وجہ سے یورپی یونین ائر سیفٹی ایجنسی نے پی آئی اے کے یورپی ممالک کے لیے فضائی آپریشن کے اجازت نامے کو معطل کردیا،اس سے یورپی ممالک اور برطانیہ نے بھی پی آئی اے کی پروازوں کو روک دیا۔انہوں نے کہا کہ پی آئی اے طیارے کی تباہی کی حکومتی رپورٹ منظر عام پر آنے سے پوری دنیا میں پی آئی اے کی بدنامی ہوئی اور ادارے کو زبردست مالی نقصان اٹھانا پڑا،پائلٹس کو مورد الزام ٹھہرانے سےپہلےاُن افسروں کو پکڑا جائے جنہوں نے ان جعلی لائسنسزوالے پائلٹوں کے انٹرویوزاور تعیناتیاں کیں۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -