کورونا وار میں ایک بار پھر تیزی ، مثبت کیسز کی شرح 4فیصد سے متجاوز،ماسک کا استعمال لازمی قرار دیدیا گیا

کورونا وار میں ایک بار پھر تیزی ، مثبت کیسز کی شرح 4فیصد سے متجاوز،ماسک کا ...
 کورونا وار میں ایک بار پھر تیزی ، مثبت کیسز کی شرح 4فیصد سے متجاوز،ماسک کا استعمال لازمی قرار دیدیا گیا

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) ملک میں کورونا وار میں ایک بار پھر تیزی آنے لگی ہے، مثبت کیسز کی شرح 4 فیصد سے تجاوز بھی کرگئی جبکہ مزید 4 افراد جان کی بازی ہار گئے۔قومی ادارہ برائے صحت کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں 18 ہزار 305 ٹیسٹ کیے گئے جن میں 818 افراد میں کورونا کے مثبت کیسز کی تشخیص ہوئی۔ محکمہ صحت کے مطابق ملک میں مثبت کیسز کی شرح 4.47 فیصد تک پہنچ گئی ہے جبکہ 126 افراد کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے۔ملک بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس سے مزید 4 افراد جان کی بازی ہار گئے۔

علاوہ ازیں  وفاقی وزارت صحت نے کورونا کے کیسز میں اضافے کے پیش نظر نئے ایس او پیز جاری کردیئے جس میں کہا گیا ہے کہ دفاتر سمیت ہرجگہ بیٹھنے کے دوران سماجی فاصلہ رکھا جائے۔ این سی او سی نے سرکاری دفاتر کیلئے کورونا ایس او پیز جاری کیے ہیں جس کے تحت عبادت اور نمازوں کے دوران بھی سماجی فاصلہ جبکہ دفاتر کے داخلی راستوں اور واش رومز میں ہینڈ سینیٹائزرز کی موجودگی یقینی بنائی جائے۔وزارت صحت نے کہا کہ تمام دفاتر اور عمارتوں کے داخلی راستوں پرلوگوں کا ٹمپریچر چیک کیا جائے، کورونا کی علامات رکھنے والوں کو دفاتر اور عمارتوں میں داخل نہ ہونے دیاجائے جبکہ نزلہ، زکام اور سانس لینے میں مشکل کی صورت میں کورونا کی تشخیص کیلئے پی سی آر یا اینٹی جن ٹیسٹ کروائے جائیں۔ترجمان وزارت صحت کا مزید کہنا تھا کہ این سی اوسی کی طرف سے کورونا سے بچاؤ کے طریقہ کارپرسختی سے عملدرآمد کی ہدایت کی گئی ہے۔وزارت صحت نے ہدایت کی ہے کہ ماسک کا استعمال یقینی بنائیں، ہاتھ ملانے سے گریز کیا جائے، و یکسین یا بوسٹر شاٹ لگوانے کو یقینی بنایا جائے۔

مزید :

قومی -تعلیم و صحت -