اگر آپ کا ٹوائلٹ دیگر افراد بھی استعمال کرتے ہیں تو اگلی مرتبہ جانے سے پہلے یہ انتہائی تشویشناک خبر ضرور پڑھ لیں

اگر آپ کا ٹوائلٹ دیگر افراد بھی استعمال کرتے ہیں تو اگلی مرتبہ جانے سے پہلے ...
اگر آپ کا ٹوائلٹ دیگر افراد بھی استعمال کرتے ہیں تو اگلی مرتبہ جانے سے پہلے یہ انتہائی تشویشناک خبر ضرور پڑھ لیں

  



نیویارک (نیوز ڈیسک) کہیں آپ بھی اپنا ٹوتھ برش ٹوائلٹ میں تو نہیں رکھتے؟ اگر ایساہے تو آپ کو یہ عادت فوری تبدیلی کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ امریکا میں کی گئی حالیہ تحقیق میں ثابت ہوا ہے کہ اگر ٹوتھ برش کو بیت الخلاءمیں رکھا جاتا ہے تو تمام تر صفائی کے باوجود اس پر انسانی فضلے کے ذرات جمع ہوجاتے ہیں، اورمزید تشویشناک بات یہ ہے کہ ان ذرات میں سے تقریباً 80 فیصد کا تعلق ان افراد کے ساتھ ہوتا ہے جو آپ کے ساتھ ٹوائلٹ شیئر کرتے ہیں۔

ریاست کنیٹیکٹ کی کوینیپیاک یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے مشترکہ ٹوائلٹ میں رکھے جانے والے ٹوتھ برشوں پر ایک جامع تحقیق کی تو تشویشناک انکشاف ہوا کہ ان میں سے ہر ایک پر فضلے کے باریک ذرات کسی نہ کسی حد تک موجود تھے اور جب حتمی اعداد و شمار جمع کئے گئے تو معلوم ہوا کہ کسی بھی ٹوائلٹ میں رکھے گئے ٹوتھ برش کا ان ذرات سے متاثر ہونے کا امکان 60 فیصد سے بھی زیادہ ہے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ٹوتھ برش پر پائے جانے والے ذرات دراصل فیکل پولی فارمز نامی راڈ نما بیکٹیریا ہیں جو کہ انسانی فضلے میں پائے جاتے ہیں اور ٹوائلٹ میں موجود ہوا کے ذریعے سفر کرتے ہوئے ٹوتھ برش تک پہنچتے ہیں۔

 تحقیق میں شامل سائنسدان لورین ایبر کا کہنا ہے کہ پریشانی کی بات یہ نہیں ہے کہ آپ کے ٹوتھ برش پر آپ کے اپنے فضلے کے ذرات پائے جاتے ہیں، بلکہ اصل تشویش یہ ہے کہ اس پر پائے جانے والے 80 فیصد ذرات دوسروں کے فضلے کے ہوتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ دوسروں کے جسم سے خارج ہونے والے ذرات میں ایسے مضر بیکٹیریا پائے جاتے ہیں جو آپ کے جسم کے ماحول سے مطابقت نہیں رکھتے اور آپ کی صحت کے لئے زیادہ نقصان دہ ثابت ہوتے ہیں۔ ٹوتھ برش پر پائے جانے والے غلیظ بیکٹیریا اسہال، انفیکشن اور جلد کے مسائل سمیت متعدد بیماریوںکاباعث بنتے ہیں۔

 تحقیق کاروں نے ہدایت کی ہے کہ بہتر طریقہ یہ ہے کہ اپنے ٹوتھ برش کو ہمیشہ ٹوائلٹ سے باہر رکھیں، اور خصوص وہ طالبعلم جو ہاسٹلوں میں رہتے ہیں اور درجنوں دوسرے طلباءکے ساتھ ٹوائلٹ شیئر کرتے ہیں انہیں احتیاط کی سخت ترین ضرورت ہے۔ یاد رکھیں کہ فیکل پولی فارمز نامی بیکٹیریا ٹوتھ برش کو ٹھنڈے یا گرم پانی سے دھونے، یا حتیٰ کہ بازار میں دستیاب خصوصی محلول سے دھونے سے بھی صاف نہیں ہوتے۔ اگر آپ سمجھتے ہیں کہ ٹوتھ برش کو ڈھانپنے والے کوور یا کیپ (Cap) سے حفاظت ممکن ہے تو یہ خیال بالکل غلط ہے، بلکہ اس کی وجہ سے برش کے ریشوں میں نمی برقرار رہتی ہے اور بیکٹیریا زیادہ پھیلتے ہیں۔

مزید : تعلیم و صحت