چین کے تعاون سے چشمہ میں سب سے بڑا نیا نیو کلیئر پاور پلانٹ لگانے کا فیصلہ

چین کے تعاون سے چشمہ میں سب سے بڑا نیا نیو کلیئر پاور پلانٹ لگانے کا فیصلہ

 اسلام آباد(آن لائن) پاکستان اٹامک انرجی کمیشن نے چین کے تعاون سے چشمہ میں سب سے بڑانیا نیوکلیئر پاورپلانٹ لگانے کافیصلہ کیا ہے، ارسانے چشمہ فائیونیوکلیئرپاور پلانٹ کے لیے دریائے سندھ سے پانی فراہم کرنے کی منظوری دے دی ہے، چشمہ جہلم لنک کینال ہیڈ میں توسیع کے اخراجات اٹامک انرجی کمیشن برداشت کرے گا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان اٹامک انرجی کمیشن نے چین کے تعاون سے بجلی کے بحران پرقابوپانے اور سستی بجلی کی پیداوارکے لیے میاں والی میں پاکستان کاسب سے بڑانیوکلیئرپاورپلانٹ لگانے کا فیصلہ کیاہے۔ دستاویزکے مطابق چشمہ فائیونیوکلیئرپاورپلانٹ کی پیداواری صلاحیت 1100میگاواٹ ہوگی، چشمہ میں اب تک325 میگاواٹ پیداواری صلاحیت کے حامل 4 نیوکلیئرپاورپلانٹ تعمیرکیے جاچکے ہیں۔ پاکستان اٹامک انرجی کمیشن کی درخواست پرارسانے دریائے سندھ سے1100 میگاواٹ چشمہ فائیومنصوبے کے لیے پانی فراہم کرنے کی منظوری دے دی ہے۔چشمہ جہلم لنک کینال سے چشمہ فائیومنصوبے کویومیہ 2508 کیوسک پانی فراہم کیاجائے گا، ارساکے مطابق چشمہ نیوکلیئرپاورپلانٹس کیلیے پانی کی فراہمی کے ساتھ پنجاب کو21702 کیوسک پانی کی فراہمی جاری رہے گی۔ ارسانے چشمہ فائیومنصوبے کے لیے واپڈاکو دریائے سندھ پر چشمہ جہلم لنک کینال ہیڈمیں توسیع کی ہدایت کی ہے، چشمہ جہلم لنک کینال کے ہیڈ میں توسیع کے اخراجات اٹامک انرجی کمیشن برداشت کرے گا۔

مزید : کامرس