1947کے مسلم کش فسادات کے حوالے سے دیا گیامتنازعہ

1947کے مسلم کش فسادات کے حوالے سے دیا گیامتنازعہ

سری نگر(کے پی آئی) 1947کے مسلم کش فسادات کے حوالے سے دئے گئے متنازعہ بیان پر ریاستی وزیر چودھری لال سنگھ کی مشکلات کم ہوتی نظر نہیں آرہی ہیں ۔اب ان کے معاملے پر سٹی جج جموں نے پولیس کو ہدایت دی ہے کہ وہ مذکورہ وزیرکے خلاف شکایت کنندگان کی عرضی کا جائزہ لے کر تحقیقاتی رپورٹ 30روز کے اندر پیش عدالت کریں ۔بدھ کو سٹی جج جموں منجیت سنگھ مہناس نے شکایت کنندگان کی عرضی پر کارروائی کرتے ہوئے انسپکٹر جنرل آف پولیس جموں کو ہدایت دی کہ وہ 30روز کے اندر اندر معاملے کی باریک بینی سے تحقیقات کریں اور اس حوالے سے جامع رپورٹ عدالت میں پیش کریں ۔واضح رہے کہ وزیر جنگلات چودھری لال سنگھ کے خلاف 11افراد پر مشتمل ایک گروپ نے پولیس کے پاس شکایت درج کرائی کہ لال سنگھ نے انہیں 1947کو ہوئے مسلم کش فسادات کی یاد دلاتے ہوئے اسی طرح کے حالات کا سامنا کرنے کی دھمکی دی ۔شکایت کنندگان میں 10مسلم اور ایک ہندو شخص شامل ہے جنہوں نے وزیر جنگلات پر انہیں ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا ۔اس معاملے میں ایک عرضی سٹی جج جموں کے پاس دائر کی گئی ہے تاکہ لال سنگھ کے خلاف قانون کے تحت کارروائی کی جائے ۔

مزید : عالمی منظر