فلم مالک کی نمائش کی اجازت دینے سے ملک میں فساد کا خطرہ ہے: وفاقی حکومت کا لاہور ہائیکورٹ میں جواب

فلم مالک کی نمائش کی اجازت دینے سے ملک میں فساد کا خطرہ ہے: وفاقی حکومت کا ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی )وفاقی حکومت نے فلم مالک پر پابندی کے حوالے سے لاہور ہائیکورٹ میں موقف اختیار کیا ہے کہ فلم مالک پاکستان کی سالمیت کے لئے خطرہ ہے، اس کی نمائش کی اجازت دینے سے ملک میں فساد کا خطرہ ہے ،مسٹر جسٹس شمس محمود مرزا کے روبرو فریقین کے دلائل مکمل ہوگئے جس کے بعد فاضل جج نے اپنا فیصلہ محفوظ کرلیا ۔وفاقی حکومت کی طرف سے ڈپٹی اٹارنی جنرل عمران عزیز نے موقف اختیار کیا کہ فلم مالک پاکستان کی سالمیت کے لئے بہت بڑا خطرہ ہے، اس وقت ملک حالت جنگ میں ہے ،فلم میں عوامی نمائندوں کی کردار کشی کی گئی ہے اور عوام کو عوامی نمائندوں کے خلاف اکسایا گیا ہے، اگر فلم کی نمائش کی اجازت دی گئی تو خدشہ ہے کہ چند ماہ بعد ملک میں دنگا فساد شروع ہو جائے گا، وفاقی حکومت کے وکیل کی منطق کو انوکھا اور مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے درخواست گزاروں کے وکلاء نے اعتراض اٹھایا کہ کیا سنی لیون کی فحش فلمیں ملکی سالمیت کے لئے خطرہ نہیں ہیں، انہوں نے موقف اختیار کیا کہ فلم مالک سماجی برائیوں کے خلاف ہے، کیا حکومت کرپشن کے خلاف آگاہی پیدا کرنے میں رکاوٹ ڈالنا چاہتے ہیں، پنجاب حکومت کی وکیل سمیعہ خالد نے موقف اختیار کیا کہ پنجاب حکومت نے فلم مالک کی نمائش پر پابندی عائد نہیں کی، عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد تمام درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کر لیاہے۔

مزید : صفحہ آخر