نریندر مودی سے دوستی کیلئے کشمیریوں کی قربانیاں فراموش نہ کی جائیں: حافظ سعید

نریندر مودی سے دوستی کیلئے کشمیریوں کی قربانیاں فراموش نہ کی جائیں: حافظ سعید

  

میر پور( اے این این )امیر جماعۃ الدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ بھارت جموں کشمیر میں پنڈتوں کے لئے علیحدہ بستیوں کے نام پر آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کی کوشش کر رہا ہے،بی جے پی حکومت مسلمانوں کی زمینیں چھین کر ہندوستانی فوجیوں کو بسا رہی ہے۔کنٹرول لائن پر باڑ لگانے کے بعد دیوار بنانے کی ہندوستانی کوششوں پر بین الاقوامی اداروں کی خاموشی افسوسناک ہے۔کشمیری قیادت کو رہا اور بھارتی فوجیوں کی آباد کاری کا سلسلہ بند کیا جائے۔نریندر مودی سے دوستی کے لئے کشمیریوں کی قربانیاں فراموش نہ کی جائیں۔مسئلہ کشمیر پر حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کا موقف ایک ہونا چاہئے۔ بھارتی عدالت کے سانحہ گجرات کے فیصلے کو مسترد کرتے ہیں۔اس سانحہ کا سب سے بڑا مجرم نریندر مودی ہے۔پاک چین اقتصادی راہداری کو ناکام بنانے کے لئے چاہ بہار کا معاہدہ ہوا۔بنگلہ دیش میں اسلام سے محبت کرنے والوں کو پھانسیاں دی جا رہی ہیں ۔کشمیر کے مسئلہ پر سیاست نہ کی جائے،وزیر اعظم آزاد کشمیر اپنی کابینہ اور سیاسی قیادت کے ہمراہ اسلام آباد میں مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کے حقوق کے لئے مضبوط کردار ادا کریں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کشمیر پریس کلب میر پور میں پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔حافظ محمد سعید نے کہا کہ کشمیر دنیا کے بڑے مسئلوں میں سے ایک بڑا مسئلہ ہے اور جنوبی ایشیا کا امن اسی مسئلہ پر منحصر ہے۔یہ دو ایٹمی ملکوں کے مابین متنازعہ ترین مسئلہ ہے لیکن دنیا میں امن کے علمبردار اس مسئلہ کو اہمیت نہیں دے رہے۔سب یکطرفہ طور پر انڈیا کی زبان بول رہے ہیں۔انڈیا کو امریکہ و مغرب کی تائید حاصل ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیرکے مسئلہ کوو حل کرنے کی کوئی سنجیدہ کوشش نظر نہیں آ رہی،اقوام متحدہ،سلامتی کونسل کا کشمیر کے مسئلہ پر کردار انتہائی تکلیف دہ ہے۔اقوام متحدہ میں قرار دادیں موجود ہیں۔پاکستان کا کشمیر پر موقف اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق ہے اور انڈیا نے قرارداوں کی خلاف ورزی کی ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت مسلسل جارحیت کر رہا ہے۔جہاں ظلم ہو وہان مسائل جنم لیتے ہیں۔1948میں اگر یہ مسئلہ حل ہو جاتا تو آج مسائل نہ ہوتے۔بھارت نے جموں میں مسلم آباد ی کے تناسب کو کمزور کر کے قراردادوں کی خلاف ورزی کی۔کشمیر میں فوج بڑھائی،باڑ لگائی،اس کا ،انڈیا کو کوئی حق نہیں تھا۔اب جموں میں دیوا ر بنا رہا ہے۔بھارت بین الاقوامی قوانین کی دھجیاں اڑا رہا ہے لیکن کوئی اسے پوچھنے والا نہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -