سربراہ مملکت کا اہم قومی معاملات نظر انداز کرنا لمحہ فکریہ ہے ‘ میاں مقصود

سربراہ مملکت کا اہم قومی معاملات نظر انداز کرنا لمحہ فکریہ ہے ‘ میاں مقصود

ملتان (سٹی رپورٹر)امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے صدر مملکت ممنون حسین کے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کومایوس کن قراردیتے ہوئے کہاہے کہ پوری قوم توقع کررہی تھی کہ صدر پاکستان ممنون حسین اپنے خطاب میں ڈرون حملوں پر امریکہ کی پُرزور مذمت کریں گے اور (بقیہ نمبر44صفحہ7پر )

پانامالیکس پر احتساب کی بات بھی کریں گے مگر افسوس ناک امر یہ ہے کہ صدر ممنون حسین نے ان دونوں اہم ایشوز پر لب کشائی کی زحمت گوارہ نہیں کی۔سربراہ مملکت کی جانب سے اہم قومی معاملات کونظر انداز کرناموجودہ حکمرانوں کے لئے سوالیہ نشان اور لمحہ فکریہ ہے۔انہوں نے کہاکہ صدر ممنون حسین کی تقریر کے برعکس آرمی چیف جنرل راحیل شریف کا ڈرون حملوں کے خلاف شدیدردعمل قابل تحسین ہے۔آرمی چیف نے درحقیقت ڈرون حملو ں پر امریکہ کے خلاف سخت موقف اختیار کرکے پوری قوم کی ترجمانی کی ہے۔انہوں نے کہاکہ آرمی چیف کی طرح صدر اور وزیر اعظم اور وفاقی وزراء کو بھی ملکی وقومی مفاد کو ہمیشہ پیش نظر رکھنا چاہئے اور قومی اہمیت کے معاملات کی کسی بھی طور پرچشم پوشی نہیں کرنی چاہئے۔انہوں نے مزیدکہاکہ کرپٹ عناصر کااحتساب بلاامتیااز ہونا چاہئے۔پانامالیکس پر وزیر اعظم نوازشریف کو اپنے موقف پر قائم رہتے ہوئے شریف فیملی کو سب سے پہلے احتساب کے لیے پیش کرنا چاہئے اور پھر باقی بدعنوان عناصر کا بھی احتساب ہونا چاہئے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر