سعودی عرب مارکیٹ میں اضافی پیداوار نہیں لائے گا:وزیر توانائی خالد الفالح

سعودی عرب مارکیٹ میں اضافی پیداوار نہیں لائے گا:وزیر توانائی خالد الفالح
سعودی عرب مارکیٹ میں اضافی پیداوار نہیں لائے گا:وزیر توانائی خالد الفالح

  

جدہ (محمد اکرم اسد) تیل مارکیٹ کو درہم برہم کرنا ہمارا مقصد نہیں ہے۔ سعودی وزیر توانائی خالد الفالح نے کہا ہے کہ سعودی عرب مارکیٹ میں اضافی پیداوار نہیں لائے گا، ہم کسی بھی صورت مارکیٹ کو درہم برہم نہیں کرنا چاہتے۔ وہ یہاں صحافیوں سے بات چیت کررہے تھے۔ اوپیک کے اجلاس میں تیل کی پیداوار کی پالیسی پر رکن ممالک میں اختلافات پائے گئے۔ ایران کا کہنا ہے کہ وہ تیل کی پیداوار میں اضافے کا حق محفوظ رکھتا ہے۔ سعودی ولیبر توانائی نے کہا کہ مختصر مدت کے لئے پٹرول کی سپلائی یا کمی پوری کرنے کے لئے اوپیک کا کردار بڑا اہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ نرخوں کے حوالے سے طویل جدوجہد درکار ہے جو رسد و طلب کو مدنظر رکھتے ہوئے کی جانی چاہیے۔ اس کے علاوہ نئے پیداواری یونٹس میں سرمایہ کاری بھی درکار ہے۔ انہوں نے کہا پٹرول کے نرخوں کو متوازن رکھنے کے لئے اوپیک کا کردار بڑا اہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب اپنی ذمہ داریوں کو درست طریقے سے ادا کرتا ہے۔ ذرائع کے مطابق ایرانی وزیر تیل نے اوپیک کے اجلاس میں پٹرول کی پیداوار میں کٹوتی کی تجویز مسترد کردی۔ انہوں نے کہا کہ پیداوار میں کمی سے ایران یا دیگر ممالک کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔ ایران پر عائد پابندیاں حال ہی میں اٹھائی گئی ہیں۔ جس کے بعد وہ عالمی تیل مارکیٹ میں شامل ہوا ہے۔

مزید :

عرب دنیا -