دریائے سوات بھپر گیا،درشخیلہ کو شدید خطرہ لاحق

دریائے سوات بھپر گیا،درشخیلہ کو شدید خطرہ لاحق
دریائے سوات بھپر گیا،درشخیلہ کو شدید خطرہ لاحق

  

مٹہ (نمائندہ پاکستان) دریا سوات بپھر گیا گاوں درشخیلہ کو شدید خطرہ لاحق عوام نے مطالبہ کیا ہیں کہ متعلقہ ادارے فوری طور پر ہنگامی بنیاد پر کام کریں تفصیلات کے مطابق گزشتہ رات دریا سوات میں ریکارڈ طغیانی ائی ہیں جس کے وجہ سے دریا کے قریب متعدد دیہاتوں کو شدید خطرہ لاحق ہیں،جبکہ تحصیل مٹہ کے تاریخی گاوں برہ درشخیلہ میں دریا نے گاوں کو گھیرے میں لے لیا ہیں اس سلسلے میں درشخیلہ گاوں سے ہی تعلق رکھنے والے ضلعی نائب ناظم عبدالجباخان اور ضلعی کونسلر وانچارج وزیر اعلیٰ شکایت سیل ثمر خان نے ویلج کونسل ممبران کے ہمراہ درشخیلہ گاوں کا معائنہ کیا اس سلسلے میں نائب ناظم ضلع سوات عبدالجبار خا ن نے متعلقہ اداروں سے ہنگامی طور پر اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ گاوں میں تھوڑا فنڈ موجود تھا جسے گاوں کے لوگو کو دیا گیا ہیں تاکہ اس سے کچھ کام چلا سکے لیکن خطرہ شدید ہیں اس لئے متعلقہ ادارے فوری طور پر اقدامات کریں اور گاوں کو بر باد ہونے سے بچائے اس سلسلے میں انچارج شکایات سیل ثمر خان نے کہا کہ سیاسی اختلاف کو بلا طاق رکھتے ہوئے تمام سیاسی پارٹیوں کواس مسلے میں اپناکردار ادا کرنا ہوگا جبکہ متعلقہ اداروں کو بھی خبر دی گئی ہیں انشائاللہ اس مسلے پر جلد سے جلد قابو پالیا جائیگا۔واضح رہیں کہ گزشتہ سیلاب میں اس گاوں سے 14افراددریا کے نظر ہوئے جسمیں کئے لڑکوں کی لاشیں تاحال نہیں مل سکی ہیں گاوں میں خوف وہراس کا عالم ہیں اور گاوں کے مکینوں نے حکومت وقت سے شدید مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہیں کہ گاوں کو برباد ہونے سے بچایا جائے۔اس موقع پر گاوں کے ویلج کونسلران محمد ریاض عامر،عالم شیر خان دیگر میاں سید واحد لالا،محمد عثمان ودیگر موجود تھیں جنہوں نے حکومت سے واقع کے فوری طور اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ہیں۔

مزید : سوات