ساہیوال، کول پاور پلانٹ کیخلاف درخواست ، فریقین کے وکلاء بحث کیلئے طلب

ساہیوال، کول پاور پلانٹ کیخلاف درخواست ، فریقین کے وکلاء بحث کیلئے طلب

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ساہیوال میں کوئلے سے چلنے والے بجلی گھر کی تعمیر کے خلاف دائردرخواست پر فریقین کے وکلاء کو بحث کے لئے طلب کر لیا ہے۔جسٹس عابد عزیز شیخ نے کیس کی سماعت شروع کی تودرخواست گزار کے وکیل اظہر صدیق نے عدالت کو بتایا کہ پنجاب پاکستان کا زرخیز ترین صوبہ ہے ملک میں وافر پانی موجود ہونے کے باوجود ہائیڈرو انرجی کے منصوبے بنانے کی بجائے کوئلے سے چلنے والے منصوبے لگا کر زرعی اراضی کو تباہ کر رہی ہے۔کول پراجیکٹ کی مشینری چین سے منگوا کر صرف چین کو مالی فوائد دئیے جارہے ہیں اور کک بیکس حاصل کئے جا رہے ہیں۔ساہیوال کے علاقے میں کول منصوبے سے فضائی اور زمینی آلودگی میں اضافہ ہو گا جس سے نہ صرف فصلیں اور زراعت تباہ ہو کر رہ جائے گی بلکہ ارد گرد کی زرخیز زمین بنجر ہو جائے گی۔ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل نے حکومتی جواب داخل کرنے کے لئے عدالت سے مزید مہلت کی استدعا کی۔

کول پاور

مزید : علاقائی