پاناما پیپرز کیس ، حسن نواز بھی جے آئی ٹی میں پیش ، 7گھنٹے تک سوالات کا سامنا ، حسین نواز کی آج چوتھی پیشی ، سمن جاری

پاناما پیپرز کیس ، حسن نواز بھی جے آئی ٹی میں پیش ، 7گھنٹے تک سوالات کا سامنا ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ،نیوزایجنسیاں)وزیر اعظم نواز شریف کے چھوٹے صاحبزادے حسن نواز وفاقی جوڈیشل اکیڈمی میں پاناما کیس کی جے آئی ٹی کے سامنے گزشتہ روز پیش ہوئے جہاں ان سے 7گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی ۔ حسن نواز کو جے آئی ٹی کے سامنے دو روز قبل پیش ہونا تھا تاہم ان ہی کی درخواست پر مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے انہیں جمعہ کو پیش ہونے کی اجازت دی تھی، حسن نواز جے آئی ٹی کی ہد ا یت کے مطابق اپنے ہمراہ کئی دستاویزات بھی لائے جہاں 5رکنی تحقیقاتی ٹیم نے تقریبا 7گھنٹے تک حسن نواز سے پوچھ گچھ کی۔ حسن نواز اپنے ساتھ چار فائلیں لائے تھے جو انہوں نے تحقیقاتی کمیٹی کو جمع کرائیں۔ حسن نواز جمعہ کی صبح 10بجے جوڈیشل اکیڈمی پہنچے ۔ ایک گھنٹے کے انتظار کے بعد 11بجے جے آئی ٹی اراکین نے حسن نواز سے سوالات کاسلسلہ شروع کیااور سپریم کورٹ کے 13 نکاتی سوالنامے کی روشنی میں بیان لیا گیا۔ دوسری جانب وزیر اعظم کے بڑے صاحبز ا د ے حسین نواز کو بھی چوتھی پیشی کا سمن جاری کردیا گیا ہے اور انہیں آج ہفتے کے روز طلب کیا گیا ہے۔پاناما کیس کی جے آئی ٹی میں وزیراعظم کے چھوٹے بیٹے حسن نواز کی یہ پہلی پیشی تھی، 7گھنٹے تک جاری رہے والی پوچھ گچھ میں نماز کا وقفہ بھی شامل ہے۔ حسن نواز کی پیشی کے مو قع پر حسن نواز کی سکیورٹی گارڈز پولیس اہلکاروں سے گھتم گتھا ہوگئے حسن نواز جب جے آئی ٹی کے سمن پر جوڈیشل اکیڈمی پہنچے تو انکے ہمراہ وزیر اعظم ہاؤس کی سکیورٹی بھی موجود تھی جونہی حسن نواز جوڈیشل اکیڈمی میں داخل ہوئے تو وزیر اعظم ہاؤس کی سکیورٹی گارڈز بھی انکے ہمراہ داخل ہوناچاہتے تھے لیکن پولیس اہلکاروں نے انکو روک لیا جس پر پو لیس اہلکاروں کیساتھ وزیر اعظم ہاؤس کی سکیورٹی گتھم گھتا ہوگئے اور موقف پیش کیاکہ ہمیں وزیر اعظم ہاؤس سے احکامات ہیں کہ حسن نواز کیساتھ اندر ہر حالت میں جاناہے شدید تلخ کلامی کے بعد حسن نواز کو پولیس اہلکاروں نے کہاہمیں صرف آپکے اور آپکے ایڈوائزر کو اندر جا نے کے احکامات ہیں کیونکہ وزیر اعظم ہاؤس کی سکیورٹی کا اندر کوئی کام نہیں جس پرحسن نواز ایڈوائزز کیساتھ جوڈیشل اکیڈمی داخل ہو گئے ۔ اس موقع پر مسلم لیگ(ن)کے کارکنوں نے وزیر اعظم نواز شریف اور ان کے حق میں نعرے لگائے اس سے قبل حسن نواز کے بڑے بھائی حسین نواز پانچ دن میں تین بار جے آئے ٹی کے سامنے پیش ہو چکے ہیں ۔حسن نواز جے آئی ٹی میں اپنا بیان ریکارڈ کرانے کے بعد جو ڈ یشل اکیڈمی سے باہر آئے تو کارکنوں نے انہیں گھیر لیا۔ حسن نواز میڈیا سے گفتگو کیلئے گاڑی سے دو بار باہر نکلے تاہم دھکم پیل کی وجہ سے وہ میڈیا سے گفتگو نہ کر سکے۔ جس کے بعد حسن نواز نے ہاتھ ہلا کر کارکنوں کے نعروں کا جواب دیا اور جوڈیشل اکیڈمی سے روانہ ہو گئے۔ اس موقع پر مسلم لیگ (ن) کے رہنما ڈاکٹر آصف کرمانی، طارق فضل چوہدری، سمیت میئراسلام آباد بھی جوڈیشل اکیڈمی کے باہر موجود رہے ۔ حسن نواز جے آئی ٹی کے سامنے پہلی مرتبہ پیش ہوئے ہیں جبکہ اس سے قبل انہیں ایک مرتبہ جے آئی ٹی نے بلایا تھا لیکن وہ پیش نہیں ہوئے تھے۔ دوسرے سمن پر جمعہ کے روز حسن نواز مشترکہ تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے۔دوسری جانب وزیراعظم نواز شریف کے بڑے صاحبزادے حسین نواز آج چوتھی مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے۔

حسن نواز پیش

مزید : صفحہ اول