معاشرے کے تضحیک آمیز رویے سے تنگ کراچی کی لڑکی نے جنس تبدیل کر لی

معاشرے کے تضحیک آمیز رویے سے تنگ کراچی کی لڑکی نے جنس تبدیل کر لی
معاشرے کے تضحیک آمیز رویے سے تنگ کراچی کی لڑکی نے جنس تبدیل کر لی

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )لوگوں کی تنقید اور نارواسلوک سے تنگ کراچی کی نوجوان لڑکی نے جنس تبدیل کر لی جس کا کہنا ہے کہ معاشرے کے تضحیک آمیز رویے کے ساتھ ساتے جنسی مسائل کا سامنا کرنا بے حد مشکل تھا۔

تفصیلات کے مطابق معاشرے کے نارواسلوک سے پریشان آکر کراچی کی کنول سدرہ نامی لڑکی نے کامیاب آپریشن کے بعد جنس تبدیل کر لی ۔ کنول سدرہ سے عبداللہ بننے والے شہری کا کہنا تھا کہ معاشرے کے تضحیک آمیز رویے کے ساتھ ساتھ جنسی مسائل کا سامنا نہایت مشکل تھا۔”اکثر اوقات رات کو جب کام سے آتا تھا تو لوگ مجھ پر غیر اخلاقی جملے بھی کستے تھے “۔

مزید خبریں :نکاح میں 70 بیماریوں کا علاج ہے ‘ لڑکا لڑکی کے بالغ ہونے پر شادی کر دی جائے :علامہ عبدالرشید ترابی

ضرور پڑھیں: اسد عمر کی چھٹی

عبداللہ نے مزید کہا کہ جب بھی کسی راستے سے جاتا تھا تو لوگ مجھے خواجہ سرا کہتے تھے جس سے مجھے بے حد افسوس ہوتا تھا اور جب والدین کو بتاتا تھا تو وہ راستہ تبدیل کر کے گھر آنے کی ہدایت کرتے تھے جس کے بعد میں نے جنس تبدیل کرنے کا فیصلہ کیا ۔

جنس تبدیل کرنے والی لڑکی کی ڈیلی پاکستان سے گفتگو بھی سنئیے۔

مزید : کراچی