چاہتے ہیں کہ جے آئی ٹی کی تحقیقات کا معاملہ بھی خوش اسلوبی سے طے ہو جائے :حسین نواز

چاہتے ہیں کہ جے آئی ٹی کی تحقیقات کا معاملہ بھی خوش اسلوبی سے طے ہو جائے :حسین ...
 چاہتے ہیں کہ جے آئی ٹی کی تحقیقات کا معاملہ بھی خوش اسلوبی سے طے ہو جائے :حسین نواز

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم نواز شریف کے صاحبزادے حسین نواز نے کہا ہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ جے آئی ٹی کی تحقیقات کا مرحلہ بھی خوش اسلوبی سے طے ہو جائے ۔ان کا کہنا تھا کہ مجھے جتنی بار بھی سمن ملیں گے میں اتنی مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو ں گا ۔

حسین نواز چوتھی مرتبہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے جہاں چار گھنٹے سے زیادہ ان سے سوال جواب کا سلسلہ جاری رہا۔بعد ازاں میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ مجھ سمیت شریف خاندان نے ماضی میں بھی احتساب کے نام پر ان معاملات کا سامنا کیا ہے ،یہ ہمارے لیے کوئی نئی بات نہیں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ مشرف کے دور میں ہم14 ماہ جیلوں میں رہے بلکہ گواہان بھی جیلوں میں رہے،ہمارے خلاف کوئی ثبوت ہوتا تومشرف کے دور میں سامنے آچکا ہوتا،آج بھی وہ ہی اثاچے ہیں جو مشرف دور میں بھی تھے۔حسین نواز نے کہا کہ ہم نے عدالتی نہیں بلکہ انتظامی احتساب کا بھی سامنا کیا ،اب سچ عوام اور سپریم کورٹ کے سامنے لائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ فلیٹس متنازع نہیں ،سپریم کورٹ میں بیان دیاجا چکا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کو ابھی تک نہیں بلا یا گیا ،اگر جے آئی ٹی سوال کرنا چاہے گی تو وزیراعظم نے ہمیشہ قانون کی پاسداری کی ہے اور اب بھی وہ قانون کی پاسداری کریں گے۔حسین نواز نے اس موقع پر اعلان کیا کہ میرے ساتھ کوئی معاملہ پیش آیاتو نہ صرف عدالت بلکہ عوام کےسامنے بھی لائیں گے۔

مزید خبریں :سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی،بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ،پاک فوج کی جوابی کارروائی میں 5 دشمن فوجی ہلاک متعدد زخمی

مزید : لاہور /اہم خبریں